بنیادی صفحہ / عالمی / چین کے خلاف مورچہ بندی میں ہندوستان کو انٹری نہیں ، امریکہ نے ‘آکس’ میں شامل کرنے سے کیا انکار

چین کے خلاف مورچہ بندی میں ہندوستان کو انٹری نہیں ، امریکہ نے ‘آکس’ میں شامل کرنے سے کیا انکار

Print Friendly, PDF & Email

نئی ہلی : امریکہ نے ہندوستان یا جاپان کو آسٹریلیا اور برطانیہ کے ساتھ مل کر انڈو پیسیفک کی سیکورٹی کیلئے بنائے گئے سہ فریقی اتحاد ‘آکس’ میں شامل کرنے سے منع کردیا ہے ۔ حال ہی میں امریکہ کے صدر جو بائیڈن نے 15 ستمبر کو آسٹریلیا کے وزیر اعظم اسکاٹ ماریسن اور برطانیہ کے وزیر اعظم بورس جانسن کے ساتھ انڈوپیسیفک کی سیکورٹی کیلئے ایک سہ فریقی اتحاد ‘آکس’ کا اعلان کیا تھا ۔
اس سمجھوتہ کے بعد اب آسٹریلیا کو جوہری توانائی سے چلنے والی آبدوزوں کی بڑی کھیپ دی جائے گی ۔ اس سلسلہ میں بدھ کو وہائٹ ہاوس کی پریس سکریٹری جین ساکی نے کہا کہ ‘آکس’ کے اعلان کے وقت صدر جو بائیڈن نے جو کہا وہ علامتی نہیں تھا ، مجھے لگتا ہے کہ انہوں نے فرانس کے صدر کو سیدھی بات کہی ہے کہ ‘آکس’ میں اب کسی دیگر ملک کو شامل نہیں کیا جائے گا ۔
بتادیں کہ وہائٹ ہاوس کی پریس سکریٹری نے یہ بات اس سوال کے جواب میں کہی ، جس میں پوچھا گیا تھا کہ کیا ہندوستان کو ‘آکس’ اتحاد میں شامل کیا جائے گا یا نہیں ۔ حالانکہ اس اتحاد میں شامل نہیں کئے جانے کے بعد فرانس نے اس کی تنقید کی تھی ۔
بتادیں کہ 24 ستمبر سے کواڈ چوٹی کانفرنس شروع ہورہی ہے اور اس مرتبہ امریکہ اس کی میزبانی کررہا ہے ۔ امید تھی کہ اس کانفرنس سے پہلے ہندوستان کو اس سیکورٹی ایلائنس کا حصہ بنایا جائے گا ۔ آپ کو بتایں کہ وزیر اعظم مودی اس وقت کواڈ چوٹی کانفرنس میں شرکت کیلئے امریکہ پہنچ چکے ہیں ۔ وہ تین ن تک امریکہ میں رہیں گے ۔ اس وران وزیر اعظم مودی امریکہ کی نائب صر کملا ہیرس سے بھی ملاقات کریں گے ۔
امریکہ ، آسٹریلیا اور برطانیہ کے اس سیکورٹی ایلائنس کو انڈوپیسیفک خطہ میں چین سے ملاقات کرنے کی کوشش کے طور پر دیکھا جارہا ہے ۔ یہ پہلی مرتبہ ہوگا جب امریکہ اور برطانیہ آسٹریلیا کو ایٹمی توانائی سے چلنے والی آبدوزوں کو ڈیولپ کرنے کی تکنیک دیں گے ۔ ‘آکس’ کو لے کر چین نے تیکھا رد عمل ظاہر کیا ہے ۔ چین نے کہا کہ اس طرح کے اتحاد کا کوئی مستقبل نہیں ہے ۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*