بنیادی صفحہ / تازہ خبریں / شہر میں طوفانی بارش: کئی علاقے ڈوب گئے ٹریفک جام اور گھروں میں پانی گھس جانے کی وجہ سے لوگ پریشان۔ مزید بارش کی پیش گوئی

شہر میں طوفانی بارش: کئی علاقے ڈوب گئے ٹریفک جام اور گھروں میں پانی گھس جانے کی وجہ سے لوگ پریشان۔ مزید بارش کی پیش گوئی

Print Friendly, PDF & Email

بنگلورو۔6؍اکتوبر (ذرائع) سلیکان سٹی جمعرات کے روز طوفانی بارش کی وجہ سے بری طرح متاثر ہوا ۔ آج دوپہر کو گرج اور چمک کے ساتھ ہوئی موسلادھار بارش سے بنگلور شہر میں عام زندگی مفلوج ہوگئی اور ہر جگہ ٹریفک جام کی وجہ سے لوگوں کو مصیبت کا سامنا کرنا پڑا۔ کئی سڑکوں پر 4؍فیٹ تک پانی جمع ہوگیا جس کی وجہ سے کئی کلو میٹر تک ٹریفک جام رہا جس سے گاڑیوں کے مالکان کو کافی پریشانی اٹھانی پڑی۔ شہر کے 10؍سے زیادہ علاقوں میں درخت گرگئے۔ تقریباً 100؍سے زیادہ مکانوں کے اندر پانی گھس گیا۔ بارش سے نائینڈنہلی میں ایک دیوار بیٹھ گئی۔ بارش سے کے آر سرکل تالاب بن گیا۔ اسی طرح میجسٹک ، کے آر مارکیٹ ،بلاری روڈ، ہیبال سرکل، آنند راؤ سرکل سمیت کئی علاقوں میں ٹریفک میں خلل پڑنے سے دوپہیہ اور دیگر موٹر گاڑیوں کا گزر مشکل ہوگیا اور پولیس کو بھی کافی جدوجہد کرنی پڑی۔ الیکٹرانک سٹی کے پی ای ایس کالج سے قریب ایک بی ایم ٹی سی بس اور آٹو رکشا پوری طرح پانی میں ڈوب گئے۔ مقامی افراد کی مدد سے مسافروں کو محفوظ مقام تک پہنچایاگیا۔ میسور روڈ کے قریب بڑے برساتی نالے ورشابھاوتی میں پانی بھرجانے کی وجہ سے اس کا پانی سڑک پر آنے لگا جس سے آس پاس کی سڑکیں زیر آب آگئیں۔ گاڑیوں کا گزر کافی مشکل ہوگیا۔ بی ٹی ایم لے آؤٹ سمیت دیگر کئی علاقوں کی سڑکوں پر موجود گٹر بھرجانے سے آلودہ پانی برساتی پانی میں مل کر نشیبی علاقوں میں داخل ہونے لگا اور ان علاقوں کے کئی مکانوں میں پانی بھی گھس گیا۔ وہاں کے لوگوں کو کافی پریشانی اٹھانی پڑی۔ شہر کے شیوانندسرکل سے قیرب انڈر پاس میں تقریباً 7؍فیٹ پانی جمع ہوچکاتھا اور بی ایم ٹی سی بسوں کو اس انڈر پاس سے گزرنا دشوار ہوچکا تھا۔ اس انڈر پاس سے داخل ہونے کی کوشش میں ایک کار پانی میں پھنس کر خراب ہوگئی ۔ شہر کے مضافات بمنہلی ،کونپناہلی، ہسور روڈ، ہباگڑی، چنداپور، آنیکل اور بنرگٹہ علاقوں میں موسلادھار بارش کی وجہ سے ہسور روڈ اور بنرگٹہ روڈ پر کئی کلو میٹر تک ٹریفک جام رہا۔ کے آر مارکیٹ میجسٹک ،شیوانند سرکل، ٹاؤن ہال، کورمنگلا، مڈیوال، شیشادری پورم، ہسور روڈ، نائس روڈ، ملیشورم سمیت شہر کے کئی علاقوں میں ٹریفک جام ر ہا جس سے گاڑیوں کے مالکان کو کافی پریشانی کا سامنا کرناپڑا۔ گزشتہ 15؍دنوں سے مسلسل جاری بارش سے شہر کے سڑکوں کی حالت بے حد خراب ہوگئی اور کئی جانیں بھی گئی ہیں۔ اب دوبارہ بارش سے ڈرائینج اور گٹر بھرکر سڑکوں پر پانی بہہ رہا ہے۔ ایم جی روڈ، شیوانند سرکل، اندرانگر، میسور روڈ ،مہالکشمی لے آؤٹ، شیوانند سرکل کی سڑکیں زیر آب ہوگئیں جس سے سڑکوں پر پڑے کھڈوں میں گرنے کا خوف موٹر گاڑی سواروں اور راہ گیروں کو ہے۔ بارش کی وجہ سے بسوں میں بھیڑ زیادہ ہونے سے پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔ اس طرح بومنہلی ، ایچ ایس آر لے آؤٹ ودیگر علاقے بھی متاثر ہوئے۔ سڑک کے کنارے کے گھروں اور نشیب وفراز علاقوں کے گھروں میں پانی گھس گیا۔ ودھان سودھا کے سامنے منعقد والمیکی جینتی تقریب میں شرکت کے لئے آئے ہزاروں افراد نے بارش سے بچنے کے لئے کرسیوں،فلیکس بورڈز کا سہارا لیا۔ محکمہ موسمیات کے ڈائرکٹر سندر میتری نے بتایا کہ اگلے 4؍سے 5؍دنوں تک بنگلور اور ساحلی علاقے سمیت ریاست کے دیگر علاقوں میں تیز بارش ہوگی۔ انہوں نے بتایا کہ مانسون اس ماہ کے آخر تک اسی طرح گرج کے ساتھ موسلادھار بارش کے امکانات ہیں۔ اس لئے عوام کو اس سے چوکنا رہنا چاہئے۔

(بشکریہ : سالار(

x

Check Also

کرناٹک: کئی پرائیویٹ اسکول ’کووڈ کیئر سینٹر‘ میں تبدیل

بنگلورو: کرناٹک میں کورونا معاملوں میں تیزی سے اضافے کے پیش نظر ...