بنیادی صفحہ / صوبائی / بیدر -گلبرگہ ریل لائین پر اگست میں ٹرائیل رن ممکن ہوگا

بیدر -گلبرگہ ریل لائین پر اگست میں ٹرائیل رن ممکن ہوگا

Print Friendly, PDF & Email

ریت کی قلت سے کاموں میں تاخیر : کھرگے
گلبرگہ :(بھٹکلیس نیوز) ایوان شاہی گلبرگہ میں ایک صحافتی کانفرینس سے خطاب کرتے ہوئے رکن پارلیمینٹ گلبرگہ و سابق مرکزی وزیر ریلوے ڈاکٹر ملیکارجن کھرگے نے کہا ہے کہ ریت کی قلت کے سبب بیدر-گلبرگہ ریلوے لائین کے کاموں میں تاخیر ہوئی ہے ۔ کملاپور اور مارگتی کے درمیان ٹنل بنانے کا کام مکمل ہوچکا ہے۔ اس طرح اگست کے مہینہ میں توقع کی جارہی ہے کہ بیدر -گلبرگہ ریلوے لائین پر ٹرائیل رن لیا جائیگا۔ انھوں نے کہا کہ ریت کی مناسب مقدار میں سپالئی کے لئے انھوں نے علاقائی کمشنر ، محکمہ مائینس اینڈ جیالوجی کے عہدہ داران اور ڈپٹی کمشنر رائچور سے بات چیت کی ہے تاکہ مناسب پلاسٹرنگ کے بعدبیدر -گلبرگہ ریلوے لائین کی تعمیر جلد مکمل ہوسکے۔ مسٹر کھرگے نے بتایا کہ گلبرگہ اور شولاپور کے درمیان ریلوے پٹریوں کی ڈبل لائین بنانے کے کام میں کنکر (بجری ) کی قلت کے سبب تاخیر ہوئی ہے ۔ انھوں نے کہا کہجہاں سے یہ ڈبل ریلوے لائین گزرتی ہے اؤ متعلقہ گرام پنچایت سے درخواست کی گئی ہے کہ وہ کنکر(بجری ) کی سپلائی میں تعاو ن کریے ۔ انھوں نے کہا کہ جب ایک بار یہ ڈبل ریلوے لائین ؤمکمل ہوجائیگی تو اس کے سبب گلبرگہ اور بنگلور کے سفر کے وقت میں دیڑھ تا گھنٹوں کی کمی ہوجائے گی۔ ڈاکٹر کھرگے نے کہا کہ گدگ -واڑی ریلوے لائین کی تعمیر گدگ سے شروع ہوئی ہے۔ اس ضمن میں 450ایکڑ اراضی سرکاری تحویل میں لی گئی ہے۔ ابھی واڑی کی طرف سے کام شروع ہونا ہے۔ اس معاملہ میں وہ بڑی اور درمیانہ درجہ کی صنعتوں کے وزیر آر وی دیش پانڈے سے تبادلہ خیال کریں گے تاکہ اس پروجیکٹ کؤے لئے فنڈس منظور ہوسکیں۔ رکن پارلیمینٹ ڈاکٹر کھرگے نے کہا کہ انھوں نے کئی بار شخصی طور پر وزیر ریولے سے ملاقات کی اور تحریری نمائیندگیاں بھی کی ہیں تاکہ گلبرگہ کے لئے ایک علیحدہ ریلوے ڈویژن کے بشمول اس علاقہ کے ریلوے پروجیکٹس جلداز جلد پایہ تکمیل کو پہنچ سکیں ۔ انھوں نے بتایا کہ یادگیر میں اگرچیکہ ریلوے کوچ فیاکٹری بالکل تیا ر ہے لیکن وزیر ریلوے سریش پربھو کے ہاتھوں سے ابھی اس کا افتتاح ہونا باقی ہے۔ ڈاکٹر کھرگے نے بتایا کہ گلبرگہ کے لئے باہر سے راستہ جوڑنے والی سڑک outer link road کی تعمیر کے لئے 300کروڑ روپئے منظور ہوچکے ہیں۔ نیشنل ہائی پروجیکٹس گلبرگہ-بنگلور، جیورگی-سری رنگا پٹن، بیجاپور-حیدر آباد براہ سندگی، یادگیر گرمٹکال اور شولاپور-گلبرگہ نیشنل ہائی وے براہ افضل پور کے کام تکمیل کے مراحل میں ہیں ۔ واڑی میں بالا رامؤ چوک پر فلائی اوور کی تعمیر کے لئے ٹینڈرس کی توثیق ہوچکی ہے۔ اس پروجیکٹ سے چیتاپورکراس اور یادگیر اور یادگیر تا تیلنگانہ کی سرحد تک جاے والی سڑک کو بہتر سے بہتر بنایا جائیگا۔ انھوں نے بتایا کہ نیشنلہائی وے کے کاموں کے لئے 643کروڑ روپیوں اور 892.95کروڑ روپیوں کے فنڈس الاٹ کئے گئے ہیں ۔ صحافتی کانفرینس میں گلبرگہ شمالی کے رکن اسمبلی الحاج ڈاکٹر قمر الاسلام، گلبرگہ اربن ڈیولوپمینٹ اتھارٹی کے صدر نشین ڈاکٹر محمد اصغر چلبل اوؤر گرمٹکال کے رکن اسمبلی بابو راؤ چنچن سور شریک تھے ۔

x

Check Also

کرناٹک میں 12 مئی کے بعد مکمل لاک ڈاؤن ہونے کے امکانات: بنگلورو میں کووڈ۔19 مثبت کیسوں کی شرح 55 فیصد سے بھی زائد

بنگلوو : کرناٹک حکومت 12 مئی 2021 کے بعد دو ہفتوں کے ...