بنیادی صفحہ / صوبائی / شمال کے بعد اب جنوب میں جمعیۃ یوتھ کلب قائم ہوں گے، مولانا محمود مدنی کی قیادت میں نوجوانوں کو جوڑنے کی پہل

شمال کے بعد اب جنوب میں جمعیۃ یوتھ کلب قائم ہوں گے، مولانا محمود مدنی کی قیادت میں نوجوانوں کو جوڑنے کی پہل

Print Friendly, PDF & Email

بنگلورو: مسلم نوجوانوں کی فکری اور جسمانی تربیت کیلئے جمعیۃ علماء ہند ملک کی مختلف ریاستوں میں جمعیۃ یوتھ کلب قائم کررہی ہے۔ اس پروگرام کا اہم مقصد نوجوانوں کو انسانیت کی خدمت کیلئے تیار کرنا ہے، بنگلورو کے دورے پر آئے معروف عالم دین، جمعیۃ علماء ہند کے جنرل سکریٹری مولانا محمود مدنی نے یہ بات کہی۔ بنگلورو کے ٹیانری روڈ پر واقع شاداب شادی محل میں جمعیۃ علماء ہند، کرناٹک کے اجلاس سے مولانا محمود مدنی نے خطاب کیا۔ مختلف اضلاع کے نمائندوں کے علاوہ جمعیۃ یوتھ کلب کے ارکان نے بھی اجلاس میں شرکت کی۔
مولانا محمود مدنی نے کہا کہ جمعیۃ علماء ہند نے چار سال قبل مسلم نوجوانوں کی شخصیت سازی کیلئے، انہیں آرگنائز کرنے کیلئے، ان کی صلاحیتوں کو ابھارنے کیلئے یوتھ کلب قائم کرنے کا فیصلہ لیا تھا۔ اس کے تحت شمالی ہند کی ریاستیں اترپردیش، گجرات، دہلی، ہریانہ میں یوتھ کلب قائم ہوچکے ہیں۔ اب جنوبی ہند کی ریاستوں میں جمعیۃ یوتھ کلب قائم کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت اسکاوٹس اینڈگائڈس کے اشتراک سے یہ خصوصی پروگرام ترتیب دیا گیا ہے۔
مولانا محمود مدنی نے کہا کہ جمعیۃ یوتھ کلب کا اہم مقصد انسانیت کی خدمت کیلئے نوجوانوں کو تیار کرنا ہے۔ نوجوان شرعی اور دنیاوی ذمہ داریوں کو سمجھیں، سماجی اور خاندانی ذمہ داریوں کو بھی بخوبی ادا کریں، اس کیلئے یہ تربیتی پروگرام جمعیۃ علماء نے ملک گیر سطح پر شروع کیا ہے۔ جمعیۃ علماء ہند، کرناٹک کے ریاستی صدر مولانا افتخار احمد قاسمی نے کہا کہ ریاست کے مختلف اضلاع میں جمعیۃ یوتھ کلب قائم کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ بنگلورو میں 100 سے زائد نوجوان اس کلب سے جڑ چکے ہیں۔ اسکاوٹس اینڈ گائڈ کے اشتراک سے گزشتہ سال تربیتی پروگرام بھی منعقد کیا گیا، لیکن کورونا وبا اور لاک ڈاؤن کی وجہ سے تربیت کے اس سلسلہ کو روک دیا گیا تھا، لیکن اب حالات معمول پر آرہے ہیں اور جمعیۃ یوتھ کلب کی سرگرمیاں دوبارہ شروع ہوچکی ہیں۔

مولانا افتخار احمد قاسمی نے کہا کہ بنگلورو سے تقریباً 125 کلومیٹر کی دوری پر واقع وی کوٹا شہرمیں جمعیۃ علماء ہند نے 5 ایکڑ اراضی اس خاص مقصد کیلئے خریدی ہے، جہاں پورے جنوبی ہندوستان کا یوتھ کلب سینٹر قائم کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ وی کوٹا شہر کرناٹک، تمل ناڈو اور آندھرا پردیش ان تینوں ریاستوں سے منسلک ہے، یہاں جنوبی ہند کی تمام ریاستوں کے نوجوانوں کی تربیت کا مستقل نظام بنایا جائے گا، جس کیلئے بڑے پیمانے پر تیاریاں بھی شروع ہوچکی ہیں۔
مولانا افتخار احمد قاسمی نے کہا کہ جمعیۃ یوتھ کلب میں ہر مسلک اور مکتب فکرکے نوجوان شامل ہوسکتے ہیں۔ مختلف سطح پر انہیں تربیت فراہم کرنے کا منصوبہ بنایا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نوجوانوں کی ذہنی اور جسمانی تربیت کے ذریعہ ان میں خود اعتمادی، مثبت سوچ، نیک اخلاق و کردار کو فروغ دینا اس پروگرام کا مقصد ہے تاکہ وہ ملک اور ملت کا اثاثہ بن کر انسانیت کی خدمت کیلئے آگے آئیں۔

x

Check Also

کرناٹک میں 12 مئی کے بعد مکمل لاک ڈاؤن ہونے کے امکانات: بنگلورو میں کووڈ۔19 مثبت کیسوں کی شرح 55 فیصد سے بھی زائد

بنگلوو : کرناٹک حکومت 12 مئی 2021 کے بعد دو ہفتوں کے ...