بنیادی صفحہ / قومی / دہلی: محبوب علی کا پیٹ پیٹ کر قتل، کورونا انفیکشن پھیلانے کا تھا شک
علامتی تصویر

دہلی: محبوب علی کا پیٹ پیٹ کر قتل، کورونا انفیکشن پھیلانے کا تھا شک

Print Friendly, PDF & Email

کورونا وائرس کی وجہ سے ہندوستان کے حالات لگاتار خراب ہوتے جا رہے ہیں۔ تبلیغی جماعت مرکز میں ہوئے جلسہ کی بات سامنے آنے کے بعد تو کورونا انفیکشن نے ملک میں مذہبی منافرت کا ماحول بھی پیدا کر دیا ہے۔ ملک کے کئی علاقوں میں اقلیتی طبقہ کے تئیں غلط سلوک کی خبریں سامنے آ رہی ہیں اور سوشل میڈیا پر بھی غلط خبریں پھیلا کر کچھ سماج دشمن عناصر فرقہ پرستی کا بیج بو رہے ہیں۔ اس درمیان ہندوستان کی راجدھانی دہلی میں اقلیتی طبقہ سے تعلق رکھنے والے 22 سالہ محبوب علی کا پیٹ پیٹ کر قتل کیے جانے کا معاملہ سامنے آیا ہے۔

 ہندی نیوز پورٹل ‘نیوز18’ پر شائع خبر کے مطابق دہلی کے بوانا میں کورونا وائرس پھیلانے کی سازش تیار کرنے کے شک میں کچھ لوگوں نے محبوب علی کی بے رحمی سے پٹائی کر دی جس کی وجہ سے وہ موت کی نیند سو گیا۔ پولس نے اس سلسلے میں بدھ کو جانکاری دی۔ ایک پولس افسر نے بتایا کہ محبوب علی بوانا کے ہریولی گاؤں میں رہتا تھا۔ بتایا جاتا ہے کہ محبوب علی تبلیغی جماعت کے ایک پروگرام کے لیے مدھیہ پردیش کے بھوپال گیا تھا اور 45 دنوں کے بعد سبزیوں کے ایک ٹرک میں بیٹھ کر دہلی واپس آیا۔

 محبوب علی کے تعلق سے پولس نے بتایا کہ وہ جب بھوپال سے واپس آیا تو اسے آزاد پور سبزی منڈی سے پکڑا گیا تھا، لیکن ڈاکٹری جانچ کے بعد اسے چھوڑ دیا گیا تھا۔ پولس کا کہنا ہے کہ جب وہ اپنے گاؤں پہنچا تو افواہ پھیل گئی کہ محبوب علی کورونا انفیکشن پھیلانے کی سازش تیار کر رہا ہے۔ اسی افواہ کی وجہ سے کچھ لوگوں نے بری طرح سے اسے پیٹا جس سے اس کی موت ہو گئی۔

 ایک سینئر پولس افسر کا کہنا ہے کہ گزشتہ اتوار کے روز کھیتوں میں لے جا کر کچھ لوگوں نے محبوب علی کی پٹائی کر دی تھی۔ زخمی حالت میں اسے اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لا کر مر گیا۔ اس سلسلے میں پولس نے معاملہ درج کر لیا ہے اور تین لوگوں کی گرفتاری بھی عمل میں آئی ہے۔

x

Check Also

کورونا وائرس : سپریم کورٹ نے جیل میں بھیڑ کم کرنے کا دیا حکم ، 90 دنوں کیلئے رہا ہوں گے قیدی

نئی دہلی : کورونا کے خطرے کے پیش نظر سپریم کورٹ نے جیل ...