بنیادی صفحہ / تازہ خبریں / بھٹکل مین روڈ پر واقع ناگر کٹے کے اطراف تعمیراتی کام پر روک لگانے کا عوام نے کیا مطالبہ: رکن اسمبلی کی مداخلت

بھٹکل مین روڈ پر واقع ناگر کٹے کے اطراف تعمیراتی کام پر روک لگانے کا عوام نے کیا مطالبہ: رکن اسمبلی کی مداخلت

Print Friendly, PDF & Email

بھٹکل :16 اپریل، 2021 (بھٹکلیس نیوز بیورو) بھٹکل مین روڈ مولانا آزاد کراس کے مقابل واقع ناگر کٹے کی متنازعہ زمین پر آج صبح جیسے ہی تعمیراتی کام شروع ہوا تو وہاں موجود عوام نے اس پر اعتراض جتاتے ہوئے انتظامیہ سے فوری روک لگانے کی مانگ کی۔
عوام کا کہنا تھا کہ یہ زمین متنازعہ ہے جس کے بارے میں پہلے بھی روک لگ چکی ہے اور یہاں تعمیر سے شہر کا ماحول بگڑنے کا خطرہ ہے جس کے لیے یہاں پہلے سے ہی پولس وین تعینات ہے ۔ عوام کے مطابق یہاں دیوار تعمیر کرنے کے لئے قریب سات انچ زمین کو قبضہ کرکے کمپاونڈ تعمیر کرنے کی مارکنگ لگائی گئی ہے جو بالکل غیر قانونی ہے ۔ عوام نے پولس کےموجود ہوتے ہوئے اس طرح کی غیر قانونی تعمیر شروع ہونے پر سوال اٹھا رہے ہیں کہ آخر پولس کی وین موجود ہوتے ہوئے کیسے کوئی متنازعہ زمین پر غیرقانونی تعمیراتی کام کر سکتا ہے۔


اس سلسلہ میں صبح میں ہی تنظیم کے ذمہ داران نے معاملے کو لے کر تحصلدار سے ملاقات کی اور روک لگانے کا مطالبہ کیا جس پر تحصلدار نے سی پی آئی کو تعمیراتی کام پر روک لگانے کا حکم دیا تاہم اس کے باوجود بھی فوری روک لگنے کے بجائے قریب دو بجے اس تعمیراتی کام پر روک لگی۔
شام کو بھٹکل رکن اسمبلی سنیل نائک نے جائے وقوع پر پہنچ کر تحصیلدار اور محکمہ پولس سے سختی کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کی جانب سے 7.50 لاکھ کی رقم یہاں تعمیراتی کام کے لئے منظور کی جاچکی ہے اور ڈپٹی کمشنر نے اس کام کے لئے دو لاکھ روپئے بھی جاری کردئے ہیں، ہم یہاں پر آج ہی تعمیراتی کام مکمل کریں گے ہمارے پاس تعمیراتی کام کا اجازت نامہ موجود ہے ۔ سنیل نائک کے مطابق ہم نے کسی کی مذہبی مقامات کی تعمیرات کو یہاں تک کہ جین بسیدھی کے قریب جہاں تعمیراتی کام کی اجازت نہیں ہے، ہم نے پرائیویٹ عمارتوں کے تعمیراتی کام کو بھی روکنے کی کبھی کوشش نہیں کی ہے ، پھر دوسرے فرقہ کے لوگ ہمارے مندر کے کام میں مداخلت کیوں کررہے ہیں ؟ ہاتھ میں پکڑے ہوئے ایک کاغذ کو دکھاتے ہوئے سنیل نائک نے کہا کہ میرے پاس اس زمین کی آر ٹی سی کے کاغذات موجود ہیں، ہم کسی نئی جگہ پر کچھ تعمیر نہیں کررہے ہیں۔ انہوں نے تحصیلدار سے مطالبہ کیا کہ ہمیں مندر کی تعمیرکے لئے سیکوریٹی فراہم کی جائے۔سنیل نائک نے بتایا کہ ہم تعمیراتی کام مکمل کرکے ہی یہاں سے جائیں گے۔ اس موقع پر موجود بھٹکل ڈی وائی ایس پی بیلی اپّا نے کہا کہ یہاں تعمیراتی کام ہونا چاہئے یا نہیں ہونا چاہئے اس کے لئے آپ اسسٹنٹ کمشنر کے پاس آکر بات کریں اگر وہ تعمیراتی کام کی اجازت دیتی ہیں تو ہم سیکوریٹی دینے کے لئے تیار ہیں۔ موقع پر بی جے پی کے کئی کارکنان سمیت آسارکیری مندر کے صدر کرشنانائک اور بھٹکل تحصیلدار روی چندرا بھی موجود تھے۔

شہر کے پرانے بس اڈے کے تھوڑی سی دوری پر مولانا آزاد روڈ کے بالمقابل واقع خالی اراضی پر غیر قانونی تعمیر کیے جانے پر مقامی لوگوں نے شدید برہمی کا اظہارکیا اور بڑی کوششوں اور جدوجہد کے بعد تعمیر پر روک لگادی گئی۔
فکروخبر سے بات چیت کرتے ہوئے کئی مقامی لوگوں نے الزام عائد کیا ہے کہ مذکورہ اراضی پر پولیس کی موجودگی میں کام شروع ہوا، مقامی لوگوں نے جب اس پر اعتراض جتایا تو پولیس نے تحصیلدار کی طرف سے اجازت ہونے کے بات کہی۔ جب لوگوں نے تحصیلدار سے رابطہ کیا تو پولیس کی بات حقیقت سے دور تھی۔ پولیس سے بار بار درخواست کے باوجود جب کام نہیں رکا تو تنظیم کے ذمہ داران نے تحصیلدار سے ملاقات کرکے اس مسئلہ پر بات کی۔ جس پر تحصیلدار نے فوری طور پر سی پی آئی کا حکم دیا ہے کہ فوری طور پر تعمیری کام پر روک لگائی جائے۔
مقامی لوگوں کا الزام ہے کہ تحصیلدار کی طرف سے تعمیری کام پر روک لگانے کے حکم کے باوجود پولیس نے اس پر روک نہیں لگائی۔ تقریباً بارہ بجے تحصیلدار نے تعمیری کام پر روک لگانے کا حکم دیا تھا لیکن روک دو بجے کے قریب جاکر لگی۔
مقامی لوگوں نے پولیس کے اس رویہ پر اپنے شدید برہمی کا اظہار کیا ہے۔ ان کے مطابق مذکورہ اراضی پر تنازعہ چل رہا ہے اور تنازعہ والی اراضی پر بغیر معاملہ حل ہوئے کسی بھی طرح کا تعمیری کام نہیں ہوسکتا۔ اس کے علاوہ بغیر اجازت کے کسی بھی اراضی پر تعمیری کام نہیں کیا جاسکتا۔ عوام کا کہنا ہے کہ اس اراضی پر تنازعہ کی وجہ سے یہاں ہمیشہ پولیس موجود رہتی ہے اور اس پر خصوصی نظر رکھتی ہے لیکن اس کے باوجود یہاں پتھر اور ریت کیسے جمع کی گئی۔ عوام بار بار یہ سوال دہرارہی ہے کہ پولیس کی موجودگی میں غیر قانونی کام کیسے شروع ہوا؟

 

x

Check Also

زندگی اور صحت کی حفاظت ایک شرعی فریضہ۔ دکانوں پر ہجوم نہ لگائیں سادگی سے عید منائیں: مسلم پرسنل لاء بورڈ کی اپیل

11مئی، 2021 (یواین آئی) حضرت مولانا سید محمد رابع حسنی ندوی صدر ...