بنیادی صفحہ / تازہ خبریں / ٹویئٹر کے بعد اب Instagram کے خلاف ایکشن کی تیاری؟ 18 جون کو پارلیمانی کمیٹی کی میٹنگ

ٹویئٹر کے بعد اب Instagram کے خلاف ایکشن کی تیاری؟ 18 جون کو پارلیمانی کمیٹی کی میٹنگ

Print Friendly, PDF & Email

مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹویئٹر (Twitter) کے بعد اب فوٹو اور ویڈیو نیٹ ورکنگ سائٹ انسٹاگرام instagram سائٹ بھی جانچ کے گھیرے میں ہے۔ دہلی پولیس کی اسپیشل سیل (Delhi Police’s Special Cell) کی ٹیم نے ایک بڑی کارروائی کو انجام دیتے ہوئے انسٹاگرام کے خلاف ایک معاملہ درج کیا ہے۔ گزشتہ کچھ وقت سے انسٹاگرام پر مذہبی اور فرقی وارانہ ماحول (religions and trying to stir communal disharmony) کو خراب کرنے کے الزام لگے ہیں۔ اسپیشل سیل کے ذرائع کے مطابق درج ایف آئی آر میں فی الحال کسی شخص کو نامزد ملزم نہیں بنایا گیا ہے۔

اس ایف آئی آر میں منگل کو در ج کیا گیا تھا ۔ اس میں دفعہ 153 A ( مذہبی گروپ کے خلاف ایک دوسرے کی کمیونٹی کے درمیان آپس میں فرقہ وارانہ ماحول کو ہوا دینا) کا بھی ذکر کیا ہے۔ معاملہ درج ہونے کے بعد اسپیشل سیل کی ٹیم جلد ہی پوچھ۔گچھ کیلیئے نوٹس بھیج کر انسٹاگرام اکاؤنٹ سے جڑے افسران کا بیان درج کرے گی۔ اس کے بعد اس معاملے میں اعلی سطحی کارروائی کو انجام دیا جائے گا۔

دراصل فروری میں حکومت ہند نے انٹرنیٹ میڈیا کے لئے نئے قواعد جاری کیے تھے جس کے لئے سوشل میڈیا پلیٹ فارم کو نئے اصول کی تعمیل کے لئے 25 مئی تک کا وقت دیا گیا تھا۔ تاہم ٹویٹر کے ذریعے اس پر صرف بہانے بازی ہی نظر آرہی تھی۔ ایسی صورتحال میں وزارت الیکٹرانکس اور آئی ٹی کے ذرائع نے بتایا کہ ٹویٹر نے ابھی 25 مئی کو نافذ ہونے والے قواعد کی تمام دفعات پر عمل نہیں کیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت نے آخری انتباہ 5 جون کو دیا تھا لیکن اس کے بعد بھی اگر ٹویٹر قواعد پر عمل نہیں کرسکتا ہے ، تو یہ واضح ہے کہ کارروائی شروع ہوگئی ہے۔

 

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

 

x

Check Also

سعودی عرب کا کورونا سے متعلق نئی سخت سفری پابندیوں کا اعلان

ریاض: سعودی عرب میں کورونا سے خطرناک حد تک متاثر ہونے والے ...