بنیادی صفحہ / بھٹکل و اطراف / کرناٹک کے ہر ضلع میں ہونگے گئو شالا: گائے کے پیشاب سے بنے گا صابن اور شیمپو۔وزیربرائے مویشی پالن

کرناٹک کے ہر ضلع میں ہونگے گئو شالا: گائے کے پیشاب سے بنے گا صابن اور شیمپو۔وزیربرائے مویشی پالن

Print Friendly, PDF & Email

بینگلورو: یکم جنوری2022 (بھٹکلیس نیوز بیورو) "حکومت مویشیوں کی دیکھ بھال اور گائے کے تحفظ کے لیے تمام اقدامات کر رہی ہے۔ گائے کے پیشاب  (گوموترا)سے صابن اور شیمپو اور گائے کے گوبر سے آئل پینٹ بنانے پر بات چیت جاری ہے،” ان باتوں کی جانکاری وزیر برائے مویشی پالن  پربھو چوہان نے دی وہ  تین ریاستوں کے دورے  سے واپسی پر آج اخباری کانفرنس میں میڈیا کے نمائندوں سے مخاطب تھے ۔

انہوں  نے مزید کہا کہ  "ریاست میں گئو شالوں کی تعمیر کا کام تیزی سے جاری ہے۔ ہر ضلع میں گئوشالا کی تعمیر کے لیے 50 لاکھ روپے منظور کیے گئے ہیں۔  ہمارا مقصد صرف گئو شالوں کی تعمیر نہیں ہے  بلکہ انہیں اتر پردیش، گجرات اور مہاراشٹرا کے طرز پر خود کفیل بنانا بھی ہے”۔

وزیر چوہان نے یہ بھی کہا کہ ریاست کے کچھ گئوشالوں کو اس پراجیکٹ کے ٹرائل کے لیے چنا جائے گا اور اس کے بعد اس  پراجیکٹ کو دیگر گئوشالوں میں بھی لاگو کیا جائے گا۔

وزیر نے کہا کہ وزیر اعلیٰ  بسواراج بومائی نے محکمہ مویشی پالن میں 458 خالی آسامیوں کو پُر کرنے کی منظوری دے دی ہے۔ دراصل یہاں 1083 آسامیاں خالی ہیں۔ تاہم وزیر اعلیٰ نے  فی الحال 458  اسامیوں کو بھرنے کی اجازت دے دی ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*