بنیادی صفحہ / بھٹکل و اطراف / گنگولی میں خاص کمیونٹی کی طرف سے مچھلی خریدنے کا بائیکاٹ کیے جانے پر بیندوربی جے پی کے اراکین نے کی مذمت:گنگولی جاکر خریدی مچھلیاں

گنگولی میں خاص کمیونٹی کی طرف سے مچھلی خریدنے کا بائیکاٹ کیے جانے پر بیندوربی جے پی کے اراکین نے کی مذمت:گنگولی جاکر خریدی مچھلیاں

Print Friendly, PDF & Email

بیندور: 11 اکتوبر، 2021 (بھٹکلیس نیوز بیورو)”گنگولی میں یکم اکتوبر کو گائے ذبیحہ کی ایک وائرل ویڈیو کے خلاف  احتجاج کرتے ہوئے میگا پدیاترا  نکالی گئی تھی جس میں  ہندوؤں نے متحد ہو کر حصہ لیا تھا ان میں ماہی گیر اور مچھلی فروش خواتین بھی شامل تھیں۔اس احتجاج میں پیغمبر اسلام حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم اور مسلمانوں کے خلاف نازیبا ااور توہین آمیز زبان استعمال کرتے ہوئے نعرے بازی کی گئی تھی۔

اس کے بعد سے گنگولی میں ایک کمیونٹی کی طرف سے مچھلیاں فروخت کرنے سے احتراز کیا جارہا تھا جس کی وجہ سے پوری مچھلی مارکیٹ خالی خالی نظر آرہی تھی۔

اس کی مذمت کرتے ہوئے آج بیندور  بی جے پی کے پسماندہ طبقات مورچہ نے وہاں جاکر مچھلیاں خرید کرنے کا پروگرام بنایا تھا۔ اس موقع پر بات کرتے ہوئے بیندور بی جے پی کے جنرل سکریٹری سدانند اپندا نے کہا کہ "یہ خواتین گنگولی کی مچھلی مارکیٹ میں مچھلی فروخت کر کے اپنی زندگی گزار رہی ہیں۔  لیکن احتجاج میں شامل ہونے کی وجہ سے ایک خاص  کمیونٹی ان سے مچھلی کی خریداری کا بائیکاٹ کر کے ان کی خود اعتمادی کو نقصان پہنچانے کی کوشش کر رہی ہے جس کو ہم کبھی کامیاب ہونے نہیں دیں گے۔ انہوں نے اس معاشی بائیکاٹ میں بی جے پی کی طرف سے ان خواتین کا ساتھ دینے کی بات کرتے ہوئے دیگر علاقوں کے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ گنگولی جاکر مچھلیاں خریدیں ۔

اس موقع پر گنگولی، اڈپی اور بیندور وغیرہ کے بی جے پی اراکین موجود تھے۔

 

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*