بنیادی صفحہ / مصنف کی تحاریر : عبدالمتین منیری (صفحہ 2)

مصنف کی تحاریر : عبدالمتین منیری

مولانا نور عالم امینی۔ ایک روشن چراغ جو بجھ گیا۔۔۔ تحریر: عبد المتین منیری۔ بھٹکل

آخر وہی ہوا جس کا دھڑکا چند روز سے لگا رہتا تھا، آج ۲۱ رمضان المبارک علی الصبح خبر آئی کہ موت وزیست کی کشمکش میں آخر زندگی ہار گئی، نبض کی سانسیں ٹوٹ گئیں اور مولانا نور عالم امینی ...

مزید پڑھیں »

مولانا وحید الدین خان، ایک عبقری، داعی ومفکر۔۔۔۔ عبد المتین منیری۔ بھٹکل

ایک سال سے زاید عرصہ بیت رہا ہے، کرونا نے ایسا قہر ڈھایا ہے کہ کندھوں میں اب میتوں کو اٹھانے کی سکت باقی نہیں رہی ، جسم نڈھال ہوگئے، اور آنکھیں ہیں کہ خشک ہونے کا نام نہیں لیتیں، ...

مزید پڑھیں »

بات سے بات: ذکر مقامات تلاوت کا۔۔۔ تحریر: عبد المتین منیری۔ بھٹکل

آج علم وکتاب گروپ پر قرآن کریم سے وابستہ علم تجوید وقراءت پر پیغامات  کو بڑی تعداد میں دیکھ کر دلی مسرت ہوئی، ورنہ  ماہ مبارک کے پہلے عشرہ  میں جس طرح دوسرے  موضوعات نے گروپ کو گھیر لیا تھا، ...

مزید پڑھیں »

بات سے بات: امام غزالیؒ اور مولانا گیلانی کی رائے۔۔۔ تحریر: عبد المتین منیری

مولانا عزیر فلاحی صاحب نے مولانا مناظر احسن گیلانی رحمۃ اللہ کی یہ رائے پیش کی ہے کہ ((امام غزالیؒ کے بعد ہونے والے تمام دینی انقلابات کے پیچھے غزالیؒ ہی کا ہاتھ ہے))، جہاں تک اس سلسلے میں ناقدانہ ...

مزید پڑھیں »

ایک قیمتی تاریخی دستاویز۔ ماہنامہ البلاغ بمبئی کا دینی تعلیمی نمبر ۱۹۵۵۔۔۔ عبد المتین منیری

تقسیم ہند کا طوفان گزرنے کے فورا بعد جمعیت علمائے ہند نے مجاہد ملت مولانا حفظ الرحمن سیوہاروی کی قیادت میں ہندوستان میں دینی تعلیمی اداروں کی نشات ثانیہ کے لئے ۱۹۵۵ء میں دہلی اور ممبئی میں دو دینی تعلیمی کانفرنسیں ...

مزید پڑھیں »

بات سے بات: امام جصاص اور بعض کتابوں کا ذکر۔۔۔ تحریر: عبد المتین منیری

آج بزم میں نورالانوار کا تذکرہ آیا ہے، یہ کتاب ہمارے استاد مولانا محمد حسین بنگلوری مرحوم نے ہمیں پڑھائی تھی۔ مولانا باقیات الصالحات ویلور کے فارغ التحصیل اور افضل العلماء کے سند یافتہ، اور برطانوی دور میں مدراس کی ...

مزید پڑھیں »

ناوزے فاترار زاللے پروگراما سلسلات چند گزارشات۔۔۔ تحریر: عبد المتین منیری

آج سگلو دیس بھلی ذہنی تکلیف انی اذیت بھیتر گزرلو، دون دیسا فوڑے ناوزے فاترا اوپر جے کائیں پروگرام زالوہوتو انی ہیں سلسلات امچے محترم مولانا محمد صادق اکرمی ندوی صاحب جیکائیں نکیر کیلے، انی ہیجی مخالفت انی تائید بھیتر ...

مزید پڑھیں »

بات سے بات: مولانا ابو العرفان اور مولانا ضیاء الحسن کی یاد۔ ۔تحریر: عبد المتین منیری

ندوے کی خوفناک راتیں کے عنوان سے ڈاکٹر محمد اکرم ندوی صاحب کی تحریر آنکھوں کو نم کرنے والی ہے،اس تحریر میں ڈاکٹر صاحب نے اپنے دو محترم اساتذہ کرام مولانا ابو العرفان ندویؒ اور مولانا محمد ضیاء الحسن ندویؒ ...

مزید پڑھیں »

مولانا دریابادی ؒ کے عاشق ، ایک شریف النفس انسان کی موت (۲)۔۔۔ تحریر: عبد المتین منیری۔ بھٹکل

طالب علمی کے اس دور میں آپ کو عثمان حسن جوباپو جیسے نیک سیرت اور باذوق  ساتھیوں کی رفاقت ملی، عثمان حسن گریجویشن کی تکمیل کے لئے اسمعیل یوسف کالج  میں داخل ہوگئے تھے، جہاں انہیں  مولانا نجیب اشرف ندوی ...

مزید پڑھیں »

مولانا دریابادی ؒ کے عاشق ، ایک شریف النفس انسان کی موت (۱)۔۔۔ تحریر: عبد المتین منیری

 مورخہ  ۳ جنوری کی دوپہر محمد سعید دامودی صاحب کے انتقال کی خبر آئی  تو ذہن فوری طور  پر سعید حسین دامودی  صاحب کی طرف نہیں گیا، لیکن فون کرنے پر  ان کے فرزند عبدالخالق  نے  استفسار پر بتایا کہ ...

مزید پڑھیں »

ڈاکٹر ابو سلمان شاہجہان پوری کا حادثہ رحلت۔۔۔ تحریر: عبد المتین منیری۔ بھٹکل

آج ڈاکٹر ابو سلمان شاہجہانپوری صاحب کے اس دنیا سے اٹھ جانے کی خبر آئی ہے، آپ نے عمر عزیز کی اکاسی بہاریں اس دنیا میں گذاریں، اور اپنے شعور کی زندگی کو علم وتحقیق کے لئے وقف کیا تھا، ...

مزید پڑھیں »

مولانا محمد اقبال ملا ندویؒ، جامعہ کے گل سرسبد(آخری قسط)۔۔ عبد المتین منیری۔ بھٹکل

بحیثیت چیف قاضی جماعت المسلمین بھٹکل بھٹکل کو جو فقہ شافعی کے نمایاں مرکز کی جو حیثیت حاصل ہوگئی ہے، اس میں مولانا کی کوششوں کا بھی کلیدی کردار رہا ہے، آپ اپنے دور کے عظیم فقیہ تھے،مولانا کا احساس ...

مزید پڑھیں »

مولانا محمد اقبال ملا ندویؒ، جامعہ کے گل سرسبد(۹) ۔۔۔از: عبد المتین منیری۔ بھٹکل

بین الجماعتی کانفرنس میں صلاحیتوں کا ظہور فروری ۱۹۸۹ء میں کالیکٹ میں تنظیم کے زیر سرپرستی اور محی الدین منیری صاحب کی کنوینر شپ میں تاریخی بین الجماعتی کانفرنس منعقد ہوئی، اس کانفرنس میں مولانا اقبال صاحب اور دیگر فارغین ...

مزید پڑھیں »

مولانا محمد اقبال ملا ندویؒ، جامعہ کے گل سرسبد(۸) ۔۔۔از: عبد المتین منیری۔ بھٹکل

جامعہ کے بعد اللہ کا کر م ہوا کہ جامعہ سے علحدگی کے فورا بعد، مسجد فاروقی میں امامت کی ذمہ داری آپ کو مل گئی،جہاں آپ نے زندگی کے آخر ی لمحے تک تقریبا چالیس سال یہ ذمہ داری ...

مزید پڑھیں »