بنیادی صفحہ / عالمی / جمال خاشقجی کے قتل کو ٹرمپ نے کیا فراموش، سعودی عرب کو سراہا
U.S. President Donald Trump reaches out to shake hands with Saudi Arabia's Crown Prince Mohammed bin Salman in the Oval Office at the White House in Washington, U.S. March 20, 2018. REUTERS/Jonathan Ernst

جمال خاشقجی کے قتل کو ٹرمپ نے کیا فراموش، سعودی عرب کو سراہا

Print Friendly, PDF & Email

واشنگٹن: اقوام متحدہ کے ذریعہ واشنگٹن پوسٹ کے لیے کالم لکھنے والے جمال خاشقجی کے قتل کی جانچ فیڈرل بیور آف انویسٹی گیشن (ایف بی آئی) سے کرائے جانے کی درخواست کے بیچ امریکی صدر ڈولنڈ ٹرمپ نے جمال خاشقجی کے مسئلہ کو فراموش کرتے ہوئے سعودی عرب کی تعریف کی ہے اور اس کے ساتھ تجارت کو اہمیت دی ہے۔

اقوام متحدہ نے سنیچر کو ایک رپورٹ جاری کرکے کہا تھا کہ کس طرح سے جمال خاشقجی کا قتل کرنے والی سعودی عرب کی ایک ٹیم نے ان کے قتل سے پہلے انھیں ’قربانی کا بکرا‘ بتایا تھا۔ اقوام متحدہ نے ایف بی آئی سے جمال خاشقجی کے قتل کی جانچ کرائے جانے کی درخواست کی تھی۔

انھوں نے کہا، ’’سعودی عرب ایک مقررہ وقت میں 400 سے 450 عرب ڈالر تجارت پر خرچ کرتا ہے۔ اس کے پاس پیسے ہیں، نوکریاں ہیں اور وہ ہتھیار پر پیسے خرچ کرتا ہے۔ میں اس کے ساتھ تجارت نہ کرنے کی بے وقوفی نہیں کرسکتا۔ اگر وہ امریکہ کے ساتھ تجارت نہیں کرے گا تو کیا کرے گا؟ وہ روس یا چین کے پاس جائے گا اور ان کے ساتھ تجارت کرے گا۔‘‘

اس قبل امریکی صدر ٹرمپ نے ایران کے ذریعہ جمعرات کو امریکہ کے ایک جاسوسی ڈرون کو مار گرائے جانے کے واقعہ کے بعد کہا تھا کہ ’’ہم جنگ نہیں چاہتے لیکن اگر ایران کے ساتھ جنگ کرنی پڑی تو ایسی تباہی ہوگی جسے دنیا نے کبھی نہیں دیکھی ہوگی۔‘‘

x

Check Also

چین نے امریکا کی کئی کمپنیاں بلیک لسٹ کر دیں

شنگھائی ۔ ایجنسیاں چین نے تائیوان کے ساتھ اسلحہ کے معاہدے کرنے ...