بنیادی صفحہ / عالمی / طالبان نے نئی حکومت کا کیا اعلان، ملا حسن اخند وزیر اعظم اور عبدالغنی برادر ہوں گے نائب

طالبان نے نئی حکومت کا کیا اعلان، ملا حسن اخند وزیر اعظم اور عبدالغنی برادر ہوں گے نائب

Print Friendly, PDF & Email

کابل: طالبان نے افغانستان میں اپنی نئی حکومت (Taliban New Government) کا اعلان کردیا ہے۔ تنظیم کے مطابق، نئی حکومت کے کاونسل کے سربراہ محمد اخند زادہ ہوں گے۔ اخند زادہ ملک کے وزیر اعظم ہوں گے۔ اس کے علاوہ عبدالغنی برادر ملک کے نائب وزیر اعظم ہوں گے۔ سراج الدین حقانی کو وزیر داخلہ بنایا گیا ہے۔ ملا یعقوب وزیر دفاع بنائے گئے ہیں۔ حکومت کے دیگر عہدیداران کا اعلان بھی طالبان ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے کیا ہے۔ ذبیح اللہ مجاہد نے واضح کیا ہے کہ یہ طالبان کی عبوری حکومت ہے، یعنی یہ حکومت صرف 6 ماہ کے لئے بنائی گئی ہے۔

 

دراصل طالبان نے 15 اگست کو کابل پر قبضہ کرلیا تھا۔ اس کے بعد سے حکومت سازی سے متعلق غوروخوض جاری تھا۔ تنظیم کے ترجمان سہیل شاہین نے نیوز 18 سے بات چیت میں کہا تھا کہ ہم حکومت میں سبھی کا تعاون چاہتے ہیں، اسی لئے دیر ہو رہی ہے۔ گزشتہ کچھ دنوں سے مانا جا رہا تھا کہ اب طالبان کی جانب سے کبھی بھی نئی حکومت کا اعلان کیا جاسکتا ہے۔

ہبت اللہ اخند زادہ کی پسند ہیں محمد حسن اخند
’دی نیوز‘ کی رپورٹ کے مطابق، ہبت اللہ اخند زادہ نے خود ملا محمد حسن اخند کو ’رئیس الجمہور‘، ’رئیس الوزارہ‘ یا افغانستان کے نئے سربراہ کے طور پر پیش کیا ہے۔ کئی طالبانی لیڈروں سے بات کرنے کے دوران سبھی نے ملا محمد حسن اخند کے نام پر رضامندی ظاہر کئے جانے کا دعویٰ کیا ہے۔

رہبری شوریٰ کے سربراہ ہیں محمد حسن اخند

ملا محمد حسن اخند موجودہ وقت میں طالبان کے اہم اور مضبوط فیصلے لینے والی باڈی رہبری شوریٰ یا قیادت کونسل کے سربراہ ہیں۔ ان کا تعلق قندھار سے ہے۔ ملا محمد حسن اخند طالبان تحریک کے بانیان میں سے ایک ہیں۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*