بنیادی صفحہ / عالمی / مصر کے سابق صدر حسنی مبارک 91 برس کی عمر میں انتقال کر گئے

مصر کے سابق صدر حسنی مبارک 91 برس کی عمر میں انتقال کر گئے

Print Friendly, PDF & Email

قاہرہ۔ مصر کے سابق صدر حسنی مبارک اپنی طویل علالت کے بعد انتقال کر گئے۔ یہ اطلاع سرکاری ٹی وی نے منگل کو دی۔ ان کی عمر 91 برس تھی۔ حسنی مبارک تقریبا 30 برسوں تک سب سے طویل عرصے تک حکومت کرنے والے حکمراں تھے۔ انہوں نے 2011 میں 18 دنوں تک چلنے والے بڑے پیمانے پر ہوئے مظاہرے کے بعد استعفی دے دیا تھا، جسے ہم ’بہار عرب‘ کے نام سے جانتے ہیں۔

بی بی سی کے مطابق، مبارک کے طویل دور حکومت کے خلاف قاہرہ، سکندریہ، سویز اور مصر کے کئی دیگر شہروں میں ہوئے احتجاجی مظاہروں کو روکنے کے لئے فوج کا استعمال کیا گیا تھا جس میں خیال کیا جاتا ہے کہ 800 سے زیادہ لوگوں کی جان گئی تھی۔ 18 دن تک چلے ان مظاہروں کی وجہ سے 30 سال تک اقتدار میں قابض رہنے کے بعد مبارک کو صدر کا عہدہ چھوڑنا پڑا تھا۔

 مبارک نے احتجاج کاروں کے قتل کے احکامات دینے کے الزامات سے انکار کیا تھا اور زور دے کر کہا تھا کہ تاریخ انہیں ایک محب وطن کے طور پر یاد کرے گی جس نے اپنے ملک کی خدمت بے لوث انداز سے کی۔
x

Check Also

ترک صدر نے کیا کورونا متاثرین کی مدد کے لئے 7 ماہ کی تنخواہ کا عطیہ

انقرہ: ترکی کے صدر رجب طیب اردگان نے کورونا وائرس سے نمٹنے ...