بنیادی صفحہ / عالمی / چین اور نیپال کا باہمی تعلقات مضبوط کرنے پر اتفاق

چین اور نیپال کا باہمی تعلقات مضبوط کرنے پر اتفاق

Print Friendly, PDF & Email

کھٹمنڈو: چین کے صدر شی جن پنگ اور نیپال کی صدر بديا دیوی بھنڈاری نے دونوں ممالک کے درمیان دو طرفہ تعلقات کو مضبوط کرنے اور ترقی اور باہمی شراکت میں تعاون کرنے پر اتفاق ظاہر کیا۔ چین کے صدر جن پنگ ہفتہ کو نیپال دورے پر کھٹمنڈو پہنچے تھے جس کے بعد انہوں نے وہاں کی صدر بھنڈاری سے ملاقات کی۔ دونوں رہنماؤں کے درمیان بات چیت کے بعد یہ اعلان کیا گیا۔
جن پنگ نے نیپال کی صدر بھنڈاری کی اس بات سے بھی اتفاق ظاہر کیا کہ نیپال اور چین کے درمیان دوستی اور باہمی شراکت داری ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں نیپال کے لوگوں کے چہروں پر ہنسی دیکھ سکتا ہوں اور یہ مجھے دوستی کا احساس کراتی ہے۔ چینی صدر نے کہا کہ انہیں امید ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان تجارتی دوستی بڑھے گی اور اس دورہ سے ہمارے دوطرفہ تعلقات نئی اونچائيوں تک پہنچیں گے ۔

جن پنگ نے نیپال کے’ ون چائنا پالیسی ‘ کی حمایت کرنے لئے اس کی تعریف کی اور کہا کہ چین ہمیشہ نیپال کی طرف سے اس ملک کی قومی سلامتی، خودمختاری اور علاقائی سالمیت کا حامی رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کو ہر شعبے میں ایک دوسرے کا تعاون اور’ ٹرانس ہمالیہ کنکٹی وٹی نیٹ ورك کا کام شروع کرنا چاہئے۔

 چین کی پیپلزجمہوریہ چین (عوامی جمہوریہ) کے 70 ویں سالگرہ منانے کے لئے جن پنگ نے کہا کہ چین مسلسل نظام میں بہتری کرتا رہے گا جس سے ملک کی ترقی ہوتی رہے۔انہوں نے کہا کہ ایک مستحکم، کھلا اور خوشحال چین ہمیشہ نیپال اور دنیا کے دیگر ممالک کے لئے ترقی کا موقع ہوگا۔

اس دوران نیپال کی صدر نے جن پنگ کا نیپال میں استقبال کرتے ہوئے انہیں عوامی جمہوریہ کی 70 ویں سالگرہ کی مبارک باد دی اور کہا کہ نیپال ہمیشہ چین کی ترقی کے کامیاب تجربے کو سیکھنے کی کوشش کرتا ہے۔بھنڈاری نے کہا کہ چین کے لوگ کمیونسٹ پارٹی آف چائنا کی قیادت میں قومی کایا کلپ کا تجربہ کرتے ہوں گے جو ظاہری طور پر نیپال کے لئے بھی فائدہ مند ہے اور یہ علاقائی امن، ترقی اور خوشحالی کے لئے کافی ضروری ہے۔

 قابل ذکر ہے کہ جن پنگ گزشتہ 23 برسوں میں نیپال کا دورہ کرنے والے پہلے چینی صدر ہیں۔ بھنڈاری نے کہا کہ اس تاریخی دورہ سے دونوں ممالک کے درمیان تجارتی دوستی اور باہمی شراکت داری کے تعلقات مضبوط ہوئے ہیں۔ نیپال دورہ سے قبل چین کے صدر دو دنوں کے ہندوستان دورے پر تمل ناڈو کے مهابلي پورم گئے جہاں انہوں نے وزیر اعظم نریندر مودی کے ساتھ دوسری غیر بات چیت کی تھی۔

جن پنگ نے بھنڈاری کی اس بات سے بھی اتفاق کیا کہ نیپال اور چین کے درمیان دوستی اور باہمی شراکت داری ہے۔ افسران کے مطابق مطابق نیپال کی صدر بھنڈاری کے ساتھ ملاقات کے دوران جن پنگ نے نیپال کو اگلے دو سال تک 56 ارب روپے کی مالی امداد دینے کا اعلان کیا۔

x

Check Also

غزہ پٹی میں اسرائیلی فوج کے فضائی حملے، 13 فلسطینی ہلاک

غزہ پٹی: اسرائیلی فوج کی جانب سے غزہ پر فضائی حملے کیے ...