بنیادی صفحہ / صوبائی / پاکستان کی حمایت میں نعرے لگانے والی امولیا لیونا کے سر پر رام سینا نے رکھا 10لاکھ کا انعام

پاکستان کی حمایت میں نعرے لگانے والی امولیا لیونا کے سر پر رام سینا نے رکھا 10لاکھ کا انعام

Print Friendly, PDF & Email

دائیں بازو کی تنظیم سری رام سینا کے ایک کارکن نے امولیا لیونا کے قتل پر 10 لاکھ روپے انعام کا اعلان کیا ہے جس نے جمعرات کی شام یہاں ایک شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے) کے خلاف ریلی میں ‘پاکستان زندہ باد’ کا نعرہ لگایا تھا۔

ایک ویڈیو فوٹیج میں شری رام سینا کارکن سنجیو ماردی حکومت سے امولیا کو رہا نہ کرنے کا مطالبہ کرتے نظر آرہے ہیں۔ وہ ویڈیو میں یہ بھی کہہ رہا ہے کہ ورنہ وہ اسے جان سے مار دے گا۔

امولیا لیونا کے خلاف سنیچر کو بیلاری میں شری رام سینا کے ذریعے منعقد ایک احتجاجی ریلی میں ماردی کہہ رہا ہے، "ریاست اور مرکزی حکومت کو کسی بھی حالت میں لڑکی کو رہا نہیں کرنا چاہئے۔ اگر اسے چھوڑ دیاگیا تو ہم اسے جان سے ماردیں گے”۔ اس کا قتل کرنے والوں کو رام سینا کی طرف سے ہم 10 لاکھ کا انعام دیں گے۔

واضح رہے کہ بنگلورو میں پاکستان کی حمایت میں نعرہ لگانے والی سماجی کارکن امولیا کے خلاف ملک سے غداری کا مقدمہ درج کرلیاگیاہے۔ بنگلورو کی اپار پیٹ پولیس نے یہ کارروائی کی ہے۔ دوسری جانب ایم آئی ایم صدر اسدالدین اویسی نے اسٹیج پر پاکستان زندہ باد کا نعرہ لگائے جانے کی سخت الفاظ میں مذمت کی ہے۔ بنگلورو کے فریڈم پارک میں ہوئی سی اے اے مخالف احتجاج میں اسدالدین اویسی کی موجودگی میں ہی امولیا نے پاکستان زندہ باد کا نعرہ تین سے چار بار لگایا۔ اس کے بعد ہنگامہ برپا ہو گیا۔ خود اسدالدین اویسی کھڑے ہوئے ہوئے اور امولیا کے ہاتھ سے مائک چھیننے لگے۔ اویسی نے فوری طور پر اس حرکت کی مذمت کی اور واضح کیا کہ ان کا اور انکی پارٹی کا اس واقعہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ اویسی نے اجلاس کے منتظمین کو بھی آڑے ہاتھوں لیا۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کے لوگوں کو اسٹیج پر کیوں بلایا گیا۔

x

Check Also

باغی ارکان اسمبلی کو منانے بنگلورو گئے وزیر جیتو پٹواری اور لکھن سنگھ کے ساتھ مار پیٹ

بھوپال۔ سیاسی اتھل پتھل کے درمیان مدھیہ پردیش میں حکمراں پارٹی کانگریس نے ...