بنیادی صفحہ / صوبائی / بنگلورو۔ شاعر مشرق علامہ اقبال کے شاگرد شاہ ابوالحسن ادیب کو کیا گیا یاد

بنگلورو۔ شاعر مشرق علامہ اقبال کے شاگرد شاہ ابوالحسن ادیب کو کیا گیا یاد

Print Friendly, PDF & Email

بنگلورو۔ کرناٹک کی ممتاز ادبی شخصیت مولانا شاہ ابوالحسن ادیب کو بنگلورو میں یاد کیا گیا۔ شہر کے دارالسلام میں کنڑا اور اردو تعلیمی ترقیاتی تنظیم کے تحت سمینار اور مشاعرہ منعقد ہوا۔ مولانا شاہ ابوالحسن ادیب کرناٹک کی واحد ایسی شخصیت تھیں جنہیں شاعر مشرق علامہ اقبال کے شاگرد ہونے کا شرف حاصل تھا۔ آپ کولارشہر سے لاہور گئے اوروہاں ایم اے کی تعلیم حاصل کی۔ لاہور سے لوٹنے کےبعد کرناٹک میں اردو زبان وادب کے فروغ میں اہم رول ادا کیا۔

سمینار میں مقالہ نگاروں نے مولانا شاہ ابوالحسن ادیب کی حیات اور خدمات پر مقالے پیش کئے۔ روزنامہ سالار کے سابق ایڈیٹر افتخاراحمد شریف نے کہا کہ مولانا شاہ ابوالحسن میرے ماموں تھے۔ اورینٹل کالج لاہور میں علامہ اقبال کے شاگرد ہونے کا شرف انہیں حاصل تھا۔ تین سال تک لاہور میں ایم اے کی تعلیم حاصل کی۔ افتخار احمد شریف نے کہا کہ شاہ ابوالحسن کے والد عاصم صاحب انگریز حکومت کے دور میں سب انسپیکٹر تھے۔ انہوں نے اپنے بیٹے کی پڑھائی کی جانب خاص توجہ دی اور انہیں اعلی تعلیم کیلئے ریاست میسور سے لاہور بھیجا۔

اس سمینار میں میسور یونیورسٹی کے شعبہ اردو کے سابق صدر پروفیسر ایس مسعود سراج نے بھی مولانا شاہ ابوالحسن ادیب کی خدمات پر روشنی ڈالی۔ مسعود سراج نے کہا کہ انہوں نے نہ صرف اردو بلکہ عربی اور فارسی زبان میں بھی شاعری کی ہے۔ ماہر عروض وبلاغت تھے۔ قواعد پر خاص توجہ دی۔1990میں بچوں کیلئے جواہر اردو کے نام سے قاعدہ مرتب کیا۔ کرناٹک اردو اکیڈمی کی سابق رکن فاطمہ زہرا نے مولانا شاہ ابوالحسن  کے بڑے فرزند پروفیسر سراج الحسن ادیبی کے فن اور شخصیت پر مقالہ پیش کیا۔

 اس سمینار میں پروفیسر سراج الحسن سراج ادیبی، پروفیسر مولوی بیشر الحسن ادیب، نورالحسن انور ادیب،نجم الحسن انجم ادیب، پروفیسر سید احمد شاکر ادیب کو بھی یاد کیاگیا۔ مقالہ نگاروں نے کہا کہ کرناٹک کے کولارضلع سے تعلق رکھنے والے ادیبی خاندان نے اردو زبان وادب کے فروغ کیلئے گراں قدر خدمات انجام دی ہیں۔ ان خدمات کو کبھی فراموش نہیں کیا جا سکتا۔ سمینار کے اختتام پر مشاعرے کا بھی انعقاد عمل میں آیا۔ کرناٹک اردو اکیڈمی کے سابق صدر مبین منور کی صدارت میں مشاعرہ منعقد ہوا۔ تقریب میں منتخب اساتذہ کو اعزاز سے نوازا گیا۔ انگریزی کے ساتھ اردو کی تعلیم کو عام کرنے والے سینٹ فریزر ہائی اسکول کو بیسٹ اسکول ایوارڈ سے نوازا گیا۔
x

Check Also

کرناٹک میں تین طلبہ میں کورونا کی علامات پائی گئیں، اسپتال میں داخل

کرناٹک میں تین طلبہ میں کورونا وائرس کی علامات پائے جانے کے ...