بنیادی صفحہ / صوبائی / سماع خراش سائلنسر والی گاڑیوں کی آرسی معطل 4اسٹروک آٹو رکشوں کی سبسڈی کیلئے جلدی کریں ،آئی ایس آئی اور بی ایس آئی فل یا ہاف ہیلمٹ پہننے کی اجازت ہے:ٹرانسپورٹ کمشنر

سماع خراش سائلنسر والی گاڑیوں کی آرسی معطل 4اسٹروک آٹو رکشوں کی سبسڈی کیلئے جلدی کریں ،آئی ایس آئی اور بی ایس آئی فل یا ہاف ہیلمٹ پہننے کی اجازت ہے:ٹرانسپورٹ کمشنر

Print Friendly, PDF & Email

بنگلور۔10جنوری(بھٹکلیس نیوز بیورو) غیر معیاری سائلنسر کے ذریعہ سماع خراش آوازوں کے ساتھ دندناتے ہوئے گھومنے والی سواریوں کو ضبط کرلیا جائے گا اور چار ماہ تک کیلئے رجسٹریشن سرٹی فکیٹ ( آرسی) معطل کردی جائے گی ۔ اس بات کی اطلاع ٹرانسپورٹ کمشنر بی دیانند نے دی ۔ شہر کے شانتی نگر میں واقع مرکزی دفتر میں اخباری کانفرنس سے گفتگو کرتے ہوئے دیا نند نے کہا کہ چند افراد اپنی سواریوں میں زیادہ آوازوالے سائلنسر نصب کررہے ہیں ، کانوں میں پھونچال پیدا کرنے والے سائلنسر نصب کرنے کی وجہ سے صوتی آلودگی میں اضافہ ہورہا ہے ، صوتی آلودگی پر قابو پانے کیلئے سخت اقدامات کئے جارہے ہیں ۔ اس ضمن میں بڑی آواز والے سائلنسر کی حامل سواری ضبط کرنا بھی ہے ۔ موٹر وھیکل قانون کے تحت رجسٹریشن سرٹی فیکیٹ معطل کردی جائے گی اور کریہہ آواز والے سائلنسر کی گاڑی ضبط کرلی جائے گی ۔ اس سلسلہ میں ٹرافک پولیس کے ساتھ گفتگو کی گئی ہے اور ٹرافک پولیس سے کیا گیا ہے ۔ غیر معیاری سائلنسر والی گاڑیوں کی آرسی محکمہ کو روانہ کردیا جانے ۔ اس کے علاوہ سماع خراش ہارن لگانے والی گاڑیوں کا بھی پتہ لگایا جائے اور ان پر کارروائی کرتے ہوئے جرمانہ عائد کیا جائے ۔ سماع خراش ہارن اور صوتی آلودگی کا باعث بننے والے سائلنسر کی گاڑیوں کا پتہ لگانے کے لئے ہفتہ میں ایک دن خاص کیا جارہا ہے، ہفتہ میں ایک دن خصوص کارروائی کرتے ہوئے ایس گاڑیوں کا پتہ لگایا جائیگا ۔
سافٹ وےئر کی تنصیب :۔رام نگر ریجنل ٹرانسپورٹ دفتر کے حدود میںآزمائشی طور پر واہن 4نامی نیا سافٹ وےئر نصب کیا جارہا ہے۔گاڑی سواروں کو چاہئے کہ وہ آن لائن رجسٹریشن کیلئے عرضی دائر کریں ۔ آن لائن عرضی کے ذریعہ مطلوبہ فیس بھی ادا کی جاسکتی ہے۔ اس سافٹ وےئر کے مثبت ومنفی پہلوؤں کو دیکھتے ہوئے عنقریب ریاست میں موجود تمام 63آر ٹی او دفاتر میں واہن ۔4سافٹ وےئر نصب کیا جائے گا۔ روڈ ٹیکس لائسنس اورایس سی فیس کو ای ۔ ادائیگی کے ذریعہ رقم ادا کرنے کا موقع فراہم کیا جائے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ جو گاڑیاں بمپر نہیں نکالیں گی۔ ان کی ایف سی کی تجدید نہیں کی جائے گی اور رجسٹریشن بھی نہیں کیا جائے گا ، دلالوں پر قد غن لگانے کیلئے ٹکنالوجی کو متاثرکن انداز میں استعمال کیا جائے گا۔ اس کے علاوہ بروقت آر ٹی اوسے فراہم سہولتیں بھی حاصل کرنے کاساز گار ماحول بنایا جائے گا ۔ انہوں نے مزید کہا ( ڈی جی لاکر نظام کے تحت ڈی ایل رجسٹریشن سرٹی فیکیٹ ( ایف سی) اور دیگر دستیاویزات جانچ کی جائیں گی ، جانچ افسران کو ڈی جی لاکر کے ذریعہ دستاویزات پیش کرنے کی گنجائش فراہم کی گئی ہے ۔
حادثات میں کی:۔ ریاست میں گزشتہ سال کی بہ نسبت امسال حادثات میں کمی آئی ہے تقریباً9.7فی صد حادثات میں کمی آئی ہے ۔ ایک سال میں 50ہزار حادثات رونما ہوئے ہیں ،جس میں 10ہزار افراد ہلاک ہوئے ہیں ، حادثات میں کمی کے حوالے سے کرناٹک پورے ملک میں سرفہرست ریاست ہے، اس کی وجہ بتاتے ہوئے کمشنر نے کہا کہ لازمی ہیلمیٹ اسپیڈ گورنر کے لزوم سے حادثات کی تعداد میں کمی واقع ہوئی ہے ،حادثات میں کمی لانے کیلئے روڈ سیفٹی نئے چےئرمین کارکردگی انجام دی ہے ۔ یہ شعبہ روڈ سیفٹی اتھارٹی کی جانب سے خدمات انجام دیتا آرہا ہے ،انہوں نے مزید کہا کہ ریاست میں600سے700صوتی جانچ کے مراکز برسر عمل ہیں۔ جو مراکز صوتی جانچ کارروائی انجام دینے سے قاصر رہے ان پر جرمانہ عائد کرتے ہوئے بند بھی کردیا جاتاہے ، انہوں نے کہا کہ آندھرا پردیش ،جئے پور، گوا ، کیرلا ، تلنگانہ ،اور چنڈی گڑھ سمیت بہت سارے شہروں میں بائک ٹیکسی کی اجازت دے دی گئی ہے ۔ اس سلسلہ میں معلومات حاصل کرنے کی خاطر ایک ٹیم کو متعلقہ ریاستوں کو بھیجا جائے گا ۔ بائک ٹیکسی سے متعلق رپورٹ آنے کے بعد شہر میں بائک ٹیکسی کیلئے اجازت فراہمی پر غور کیاجائے گا۔شہر میں بائک ٹیکسی کی گنجائش ہے یا نہیں مطالعہ کرنے کے بعدفیصلہ کیا جائیگا۔ اس کے علاوہ ای۔ رکشوں کو دوڑانے کی اجازت دی جائے۔یا انہیں دیگر محکمہ جات کے ساتھ تبادلہ خیال کرنے کے بعد فیصلہ کیا جائے گا ۔ اس موقع پر ٹرانسپورٹ ڈپارٹمنٹ جوائنٹ کمشنر نریندرہولکر،گنا نیندر کمار، ودیگر شریک رہے۔
4اسٹروک آٹو کیلئے سبسڈی:۔
شہر میں ٹو اسٹروک آٹو رکشوں پر پابندی ہے ،ٹو اسٹروق کو 4اسٹروق میں تبدیلی کا عمل جاری ہے ،993افراد کو اپنے ٹو اسٹروک آٹو رکشوں کو 4اسٹروک میں بدیل کرنے کی خاطر فی کس 3ہزار سبسڈی دی گئی ہے ۔ شہر میں 20تا22ہزار ٹو اسٹروک آٹو رکشہ ہیں، اس میں سے صرف10ہزار آٹو رکشوں کو سبسڈی دی جائے گی ۔ یکم اپریل سے دو اسٹروک آٹو رکشوں پر پابندی عائد ہے ۔ نیلمنگلا، پینیا ،اور راجہ جی نگر میں کباڑ خانے بنائے گئے ہیں ۔ آٹوڈرائیور کوچاہئے کہ وہ اپنے ٹو اسٹروک آٹو رکشوں کوکباڑ خانہ پہنچادیں ۔ کباڑ خانہ میں پہنچانے کی تصدیق کے بعد آٹو مالکان کو 30ہزار سبسڈی رقم دی جائے گی ۔ اس ضمن میں 30کروڑ روپئے بجٹ مختص کیا گیا ہے۔ اس لئے جو پہلے آنے پہلے پائے کے تحت سبسڈی رقم دی جائے گی ۔ اس کے علاوہ آٹو مالکان کو کباڑ خانے والوں کی طرف سے بھی کچھ رقم مل سکتی ہے۔ٹرانسپورٹ کمشنر دیا نند نے ہیلمٹ کے سلسلہ میں کہا کہ آئی ایس آئی اور بی ایس آئی مارک والی کوئی بھی ہیلمیٹ زیب کی جاسکتی ہے، ٹووھیلر س کے سواری آئی ایس آئی اور بی ایس آئی نشان والے مکمل یا آدھے ،ہیلمیٹ پہن سکتے ہیں۔

(بشکریہ : سالار نیوز)

x

Check Also

بارش ، سیلاب اور لینڈ سلائڈ سے اب تک 26 کی موت ، امریکہ نے اپنے شہریوں سے کہا ۔ کیرل نہ جائیں

امریکہ نے ایڈوائزری جاری کر کے اپنے شہریوں سے کہا کہ وہ ...