بنیادی صفحہ / صوبائی / کرناٹک انتخابات:پہلی مرتبہ ایک ساتھ انتخابات لڑیں گے باپ۔بیٹے،بیٹی۔داماد بھی لائن میں

کرناٹک انتخابات:پہلی مرتبہ ایک ساتھ انتخابات لڑیں گے باپ۔بیٹے،بیٹی۔داماد بھی لائن میں

Print Friendly, PDF & Email

کرناٹک۔کرناٹک میں بی جے پی اور کانگریس جوش۔شور سے انتخابی تشہیر میں مصروف ہے۔ریاست کی تاریخ میں ایسا پہلی مرتبہ ہو رہا ہے۔جب موجود وزیر اعلی اور ان کے بیٹے ایک ساتھ اسمبلی انتخابات لڑ رہے ہیں۔اب تک 9اسمبلی انتخابات لڑ چکے سدارمیا نے اپنے ڈاکٹر بیٹے یتھینتر کیلئے ورونا اسمبلی سیت چھوڑنے کا فیصلہ لیا ہے۔اس انتخاب میں سدا رمیا میسور ضلع سے متصل چامنڈیشوری سیٹ سے انتخابی میدان میں اتریں گے۔

سال 1994 میں ایسا ہی ہوا تھا جب جنتا دل کے چیف اور سی ایم امیدوار ایچ ڈی دیو گوڑا نے اپنے بیٹے ایچ ڈی ریونہ کیلئے حسن ضلع کی ہولے نارسی پورا سیٹ چھوڑ دی تھی اور بنگلورو کے پاس رام نگر سیٹ سے انتخاب لڑے تھے۔دونوں نے چناؤ جیت لیا تھا۔اس کے بعد ایچ ڈی دیوگوڑا 18 مہینے تک کرناٹک کے سی ایم رہے۔بعد میں پی ایم بھی بنے۔

 ایسا نہیں ہے کہ صرف سدارمیا ہی اپنے بیٹے کیلئے "بیٹنگ”کر رہے کانگریس کے کئی وزیر اور لیڈر بھی اپنے بیٹے ۔بیٹیوں کیلئے ‘لابنگ’کر رہے ہیں۔قریب 15کانگریس لیڈر ایسا کر رہے ہیں۔وہیں ریاست میں اپوزیشن بی جے پی اور تھرڈ پلیئر جے ڈی ایس بھی اسی طرح کی مشکل کا سامنا کر رہی ہے۔

x

Check Also

ہماری حکومت اقلیتوں کی معاشی ترقی کیلئے سنجیدہ: کرناٹک کے وزیراعلی ایچ ڈی کمارسوامی کا دعویٰ

کرناٹک کے وزیراعلی ایچ ڈی کمارسوامی نے کہا ہے کہ اُن کی ...