بنیادی صفحہ / صوبائی / کرناٹک: کانگریس کے باغی رکن اسمبلی نے خریدی 11 کروڑ کی کار، کیا بی جے پی سے ملا انعام؟

کرناٹک: کانگریس کے باغی رکن اسمبلی نے خریدی 11 کروڑ کی کار، کیا بی جے پی سے ملا انعام؟

Print Friendly, PDF & Email

کرناٹک میں کانگریس کے باغی رکن اسمبلی ایم بی ٹی ناگراج نے ایک انتہائی مہنگی کار خریدی ہے جو اس وقت موضوعِ بحث بنی ہوئی ہے۔ دراصل کانگریس سے بغاوت کر بی جے پی کو حکومت بنوانے میں مددگار ثابت ہوئے 14 اراکین اسمبلی میں سے ایک ایم بی ٹی ناگراج بھی ہیں۔ اسمبلی اسپیکر کے ذریعہ نااہل قرار دیئے گئے ناگراج نے رولس رائس فینٹم VIII نامی 11 کروڑ روپے کی کار خریدی ہے۔ ٹیکس بھرنے کے بعد اس لگزری کار کی قیمت اور زیادہ ہوگی۔

واضح رہے کہ کانگریس کے 17 اراکین اسمبلی نے پارٹی سے استعفیٰ دے دیا تھا، جس کے بعد کماراسوامی حکومت اقلیت میں آ گئی تھی اور کماراسوامی کو سی ایم عہدہ سے استعفیٰ دینا پڑا تھا۔ کماراسوامی کےا ستعفیٰ کے بعد بی جے پی لیڈر یدی یورپا نے ریاست میں اپنی حکومت بنائی تھی۔ اس وقت بی جے پی پر یہ الزام لگا تھا کہ 17 باغی اراکین اسمبلی سے پیسے کی قیمت پر استعفیٰ دلایا گیا ہے۔ انہی اراکین اسمبلی میں ناگراج بھی شامل تھے۔ حالانکہ 17 میں سے 14 باغی اراکین اسمبلی نااہل قرار دئیے جا چکے ہیں۔

 میڈیا ذرائع کے مطابق مانا جا رہا ہے کہ ابھی انھوں نے اپنی کار پر ٹیکس ادا نہیں کیا ہے۔ بہر حال، وہ کرناٹک کے پہلے لیڈر نہیں ہیں جن کے پاس اتنی مہنگی کار ہے۔ کرناٹک میں کانکنی کے لیے مشہور جناردن ریڈی کے پاس بھی ایسی ہی کار ہے۔ حالانکہ ناگراج ملک کے سب سے امیر اراکین اسمبلی میں شامل ہیں، لیکن کانگریس سے بغاوت کرنے کے بعد اور کماراسوامی حکومت گرانے کے بعد اتنی مہنگی کار خریدنے سے کئی سوال ضرور اٹھ کھڑے ہوئے ہیں۔ کہا تو یہ بھی جا رہا ہے کہ ناگراج کو بی جے پی کی یدی یورپا حکومت بنوانے میں تعاون دینے کا انعام ملا ہے۔
x

Check Also

منگلورو: ’’مسلمانوں کے بغیر ہندو راشٹر ‘ کی وکالت کر رہا تھا شخص، طلبہ نے کر دی پٹائی

منگلورو۔ کرناٹک میں منگلورو کے ایک مال میں ’ ہندو راشٹر‘ کی ...