بنیادی صفحہ / صوبائی / کانگریس کے سابق وزیر اوررکن اسمبلی پر چاقو سے حملہ

کانگریس کے سابق وزیر اوررکن اسمبلی پر چاقو سے حملہ

Print Friendly, PDF & Email

میسور، 18 نومبر۔ نرسمہاراجا سے کانگریس ممبر اسمبلی اور سابق وزیر تنویر سیٹھ پر اتوار دیر رات ایک نوجوان نے چاقو سے حملہ کر دیا جس میں وہ شدید زخمی ہو گئے ہیں۔ حملے کے بعد خون بہنے لگا تو فوری طور پر انہیں قریب میں واقع کولمبیا ایشیا ہسپتال لے جایا گیا جہاں ان کا علاج چل رہا ہے۔ اسی دوران حملہ آور فرحان کو ممبر اسمبلی کے حامیوں نے پکڑ کر پیٹا اور پھر پولیس کے حوالے کر دیا۔
تنویر سیٹھ کے ذاتی اسسٹنٹ فیروز خان نے پیر کو بتایا کہ ادے گری کا رہائشی نوجوان فرحان نے تنویر سیٹھ پر گزشتہ رات اس وقت حملہ کیا جب وہ اپنے ایک دوست کے بیٹے کے ولیمہ میں آئے ہوئے تھے۔

یہ حملہ رات 10 بجے کے بعد کیا گیا۔ حملے میں ان کی گردن پر شدید چوٹیں آئیں ہیں اور ہسپتال کے آئی سی یو میں ان کا علاج چل رہا ہے۔ ابھی وہ خطرے سے باہر نہیں ہیں۔ سرجری کے بعد خون بند ہو گیا ہے۔حملے کی خبر سن کر رات کو اور پھر پیر کی صبح ممبر اسمبلی کے حامی ہسپتال کے پاس جمع ہو گئے۔ اسے دیکھتے ہوئے ہسپتال کے ارد گرد سیکورٹی بڑھا دی گئی ہے۔

شہر پولیس کمشنر کے ٹی بال کرشن نے کہا کہ پولیس ملزم سے پوچھ گچھ کر رہی ہے۔ پولیس کے مطابق حملے کےپس پردہ مقصد کاابھی تک پتہ نہیں چلا ہے۔ سابق وزیر اور کانگریس لیڈر یو ٹی قادر سمیت کئی لیڈر تنویر سیٹھ کو دیکھنے ہسپتال پہنچے۔

x

Check Also

بی جے پی رکن پارلیمنٹ اننت کمار ہیگڑے نے گاندھی جی کو ’مہاتما‘ کہنے پر کیا اعتراض

اکثر اپنے متنازعہ بیانات کو لے کر سرخیوں میں رہنے والے بی ...