بنیادی صفحہ / صوبائی / رائچور میں آلودہ پانی پینے سے ایک کی موت۔23 بچوں سمیت  62  افراد ہوئے بیمار : میونسپل کارپوریشن کے خلاف  پھوٹا عوام کا غصہ
علامتی تصویر

رائچور میں آلودہ پانی پینے سے ایک کی موت۔23 بچوں سمیت  62  افراد ہوئے بیمار : میونسپل کارپوریشن کے خلاف  پھوٹا عوام کا غصہ

Print Friendly, PDF & Email

رائچور : 31 مئی ، 2022 (ایجنسی ) ریاست کے رائچور شہر میں آلودہ پانی پینے سے ایک شخص کی موت ہو گئی ہے، جب کہ 23 بچوں سمیت 62 افراد بیمار پڑ گئے ہیں جنہیں اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ مقامی لوگوں نے ریاستی حکومت کے خلاف ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے میونسپل کارپوریشن پر آلودہ پانی کی فراہمی کرنے کا الزام عائد کیا ہے۔

رائچور انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (ریمس) کے سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر بھاسکر نے منگل کو کہا کہ 62 لوگوں کو  قئی  اور دست کے بعد جسم میں پانی کی کمی کے سبب داخل کرایا گیا ہے۔ 29 مئی کو اندرا نگر باشندہ  40 سالہ ملمّا کی سنگین بیماری کے سبب موت ہو گئی تھی اور 31 لوگوں کو اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔ منگل کو اسپتال میں داخل لوگوں کی تعداد بڑھ کر 62 ہو گئی۔

صاف پینے کے پانی کی فراہمی یقینی کرنے میں ناکام رہنے پر رائچور شہر کے لوگ افسران اور کارپوریشن کے خلاف ناراضگی ظاہر کر رہے ہیں۔ حکومت سے ناراض مقامی لوگوں نے یہ بھی دعویٰ کیا  ہے کہ جن وارڈ کے لیے رامپور تالاب سے پانی کی فراہمی کی گئی تھی وہاں لوگ بیمار پڑ رہے ہیں۔

مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ ریاستی حکومت نے  حلانکہ صاف پینے کے پانی کی فراہمی یقینی کرنے کے لیے کئی منصوبے نافذ کیے ہیں، لیکن کارپوریشن نے آلودہ پینے کے پانی کی فراہمی کی ہے۔ مقامی باشندوں نے یہ بھی الزام لگایا کہ ضلع انتظامیہ بھی ان کی اپیل کا کوئی جواب نہیں دے رہی ہے۔

 

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*