بنیادی صفحہ / ٹیکنولوجی اور سائنس / ایم ٹی این ایل کسی بھی وقت بند ہوسکتی ہے، اِس کا پٹری پر واپس آنا ممکن نہیں

ایم ٹی این ایل کسی بھی وقت بند ہوسکتی ہے، اِس کا پٹری پر واپس آنا ممکن نہیں

Print Friendly, PDF & Email

نقصان اور فنڈ کمی کی وجہ سے سرکاری ٹیلی کام کمپنی مہانگر ٹیلی فون نگم لمیٹڈ (ایم ٹی این ایل) کو حکومت کسی بھی وقت بند کر سکتی ہے اور اس تعلق سے نیتی آیوگ نے حکومت کو مشورہ دیا ہے۔ اس مشورہ کے مطابق ایم ٹی این ایل کے آثاثوں کو فروخت کرنے کے متبادل پر غور کر نے لئے کہا گیا ہے۔ اسی کے ساتھ بی ایس این ایل کے ساتھ انضمام کی بات بھی اب ٹھنڈے بستے میں چلی گئی ہے ۔ واضح رہے ٹیلی کام محکمہ نے نیتی آیوگ سے مشورہ مانگا تھا۔ اب ٹیلی کام محکمہ جائداد کو فروخت کرنے کے لئے متبادل تلاش کرے گا۔واضح رہے ٹیلی کام محکمہ ایم ٹی این ایل کو 4 جی اسپیکٹرم دینا چاہتا تھا۔ ایم ٹی این ایل کے پاس ملازمین کو تنخواہ دینے کے لئے بھی فنڈ نہیں ہیں۔

گزشتہ ماہ ایم ٹی این ایل نے ٹیلی کام محکمہ (ڈی او ٹی) سے ملازمین کو ادا کی جانے والی پینشن اور جی پی ایف کے لئے 488 کروڑ روپے مانگے تھے۔ ڈی او ٹی نے اس مدت کے دوران ایم ٹی این ایل کی زمین اور بلڈنگ لیز پر دینے کے لئے کہا، اس کے لئے 12 کروڑ روپے کرائے کا مطالبہ کیا تھا۔

ایم ٹی این ایل کا گھاٹا 30 ستمبر 2018 کو ختم ہونے والی سہ ماہی میں بڑھ کر 859 کروڑ روپے ہو گیا تھا، اس کی مرکزی وجہ بکری میں کمی اور اخراجات میں اضافہ ہے۔ قرض میں چل رہی ایم ٹی این ایل کو ایک سال پہلے اسی مدت کے دوران 730.64 کروڑ روپے کا گھاٹا ہوا تھا۔ ایم ٹی این ایل کے اسٹاک کی قیمت پیر کو 12.20 فیصد شئیر پر بند ہوا جو کہ گزشتہ دورانیہ سے ایک فیصد زیادہ ہے۔

x

Check Also

دنیا کے سب سے بڑے اور طاقتور انجن والے طیارے کی پہلی پرواز مکمل

واشنگٹن: دنیا کے سب سے بڑے طیارے ’اسٹریٹو لانچ‘ نے اپنی پہلی ...