بنیادی صفحہ / ٹیکنولوجی اور سائنس / مشن کامیاب: اسرو کا ’پی ایس ایل وی-سی51‘ برازیلی ’ایمیزونیا-1‘ سمیت 18 سٹیلائٹوں کے ساتھ خلا کے لیے روانہ

مشن کامیاب: اسرو کا ’پی ایس ایل وی-سی51‘ برازیلی ’ایمیزونیا-1‘ سمیت 18 سٹیلائٹوں کے ساتھ خلا کے لیے روانہ

Print Friendly, PDF & Email

نئی دہلی: ہندوستانی خلائی تحقیق کی تنظیم (اسرو) نے اپنے سال 2021 کے پہلے مشن میں کامیابی حاصل کرتے ہویے اتوار کی صبح آندھرا پردیش کے شری ہری کوٹا میں واقع ستیش دھون خلائی مرکز سے پی ایس ایل وی-سی51 کو لانچ کر دیا۔ اسرو نے اس مشن کے ذریعے ایمیزونیا-1 اور دوسرے 18 سٹیلائٹوں کو بھی خلا کے لیے روانہ کیا۔

اسرو نے ایک بیان میں کہا کہ PSLV-C51، پی ایس ایل وی کا 53 واں مشن ہے۔ اس راکٹ کے ذریعے برازیل کے امیزونیا ون سیٹلائٹ کے ساتھ 18 دیگر سیٹلائٹ بھی خلا میں بھیجے گئے ہیں۔

اسرو کے مطابق یہ راکٹ چنئی سے تقریباً 100 کلومیٹر دور شری ہری کوٹا سے لانچ کیا گیا۔ اس راکٹ کو 28 فروری کو صبح 10 بج کر 24 منٹ پر لانچ کیا گیا تھا۔ اس کی الٹی گنتی ہفتے کی صبح 8.45 بجے شروع ہوئی تھی۔ ایمیزونیا-1 کو کامیابی کے ساتھ اس کی مدار میں داخل کر دیا گیا۔

پی ایس ایل وی (پولر سیٹلائٹ لانچ وہیکل) سی 51 / ایمیزونیا-1 اسرو کی تجارتی یونٹ نیو اسپیس انڈیا لمیٹڈ (این ایس آئی ایل) کا پہلا تجارت پر مبنی مشن ہے۔ ایمیزون -1 چار سال تک ڈیٹا بھیجتا رہے گا۔ برازیل سے سائنس دانوں کی ایک ٹیم اس سٹیلائٹ کی لانچنگ کے لئے ہندوستان آئی ہوئی ہے۔ اسرو کے چیئرمین کے سیون نے کہا کہ یہ ہندوستان اور برازیل دونوں کے لئے فخر کی بات ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایمیزونیا-1 کو مکمل طور پر برازیل کے سائنس دانوں نے تیار کیا ہے۔

اسرو کے اس تاریخی لمحے کے مشاہدہ کے لئے سائنس کے وزیر ستیش دھون خلائی مرکز میں موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ یہ بڑے فخر کی بات ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس لانچنگ کے لئے ہندوستان سے بہتر جگہ اور کوئی نہیں ہو سکتی ہے۔

امیزونیا-1 کے حوالہ سے بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ سٹیلائٹ ایمیزون علاقہ میں جنگلات کی کٹائی کی نگرانی اور برازیل کے لیے متنوع زراعت کا تجزیہ کرے گا اور موجودہ بنیادی ڈھانچے کو مزید تقویت بخشے گا۔

x

Check Also

مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ کے درمیان چلنے والی ہائی اسپیٖڈ ٹرین سروس ایک سال بعد بحال

سعودی عرب میں حرمین ہائی اسپیڈ ٹرین سروس ایک طویل بندش کے ...