بنیادی صفحہ / کھیل / اسپنروں کے جال میں پھنس گئے انگلش بلے باز، ہندوستان 10 وکٹ سے فتحیاب

اسپنروں کے جال میں پھنس گئے انگلش بلے باز، ہندوستان 10 وکٹ سے فتحیاب

Print Friendly, PDF & Email

ہندوستانی کرکٹ ٹیم نے احمد آباد کے موٹیرا واقع نریندر مودی اسٹیڈیم میں کھیلے گئے تیسرے ٹیسٹ میچ کے دوسرے دن ہی انگلینڈ کو 10 وکٹ سے شکست فاش دے دی۔ اس کے ساتھ ہی ہندوستانی ٹیم چار میچوں کی ٹیسٹ سیریز میں 1-2 سے برتری بنا لی ہے۔ ہندوستان کو جیت کے لیے 49 رنوں کا ہدف مل تھا جسے اس نے بغیر کوئی وکٹ گنوائے 7.4 اوور میں ہی حاصل کر لیا۔ سلامی بلے باز روہت شرما نے 25 گیندوں پر تین چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 25 رن، اور شبھمن گل نے 21 گیندوں پر ایک چوکے اور ایک چھکے کی مدد سے 15 رن بنائے۔

اس سے قبل بلے بازوں کے لئے خطرناک ثابت ہونے والی پچ پر لیفٹ آرم اسپنر اکشر پٹیل (5/32) اور آف اسپنر روی چندرن اشون (4/48) کی خطرناک گیندبازی کی بدولت ٹیم انڈیا نے انگلینڈ کو تیسرے ڈے نائٹ ٹسٹ کے دوسرے ہی دن دوسری اننگز میں صرف 81 رن پر آل آوٹ کردیا۔ انگلش بلے باز پوری طرح سے ہندوستانی اسپنروں کے جال میں پھنس گئے اور حالات ایسے بنے کہ تیز گیندبازوں کو ایک اوور بھی کرنے کا موقع نہیں ملا۔ ہندوستان کو میچ جیتنے اور آئی سی سی عالمی کپ ٹیسٹ چیمپئن شپ کے فائنل میں پہنچنے کی اپنی امیدوں کو بنائے رکھنے کے لئے 49 رن کا ہدف ملا تھا جسے اس نے بہ آسانی حاصل کر لیا۔

آج صبح جب دوسرے دن کا کھیل شروع ہوا تو ٹیم انڈیا نے تین وکٹ پر 99 رن سے آگے کھیلنا شروع کیا اور جو روٹ کے ساتھ ساتھ لیچ کی بہترین گیندبازی کے سامنے 145 رن پر سمٹ گئی۔ چونکہ انگلینڈ نے پہلی اننگ میں 112 رن بنائے تھے، اس لیے ہندوستان کو پہلی اننگز میں 33 رن کہ اہم برتری ملی۔ انگلینڈ کی دوسری اننگز 30.4 اوور میں 81 رن پر ڈھیر ہوگئی۔ اشون نے 48 رن دے کر چار کھلاڑیوں کو آوٹ کیا اور ساتھ ہی اپنی 400 ٹسٹ وکٹیں بھی مکمل کیں۔ اکشر نے 32 رن پر پانچ وکٹیں حاصل کیں ۔انہوں نے میچ میں کل 11 وکٹیں حاصل کیں جو کسی بھی گیندباز کی ڈے نائٹ ٹسٹ میں بہترین کارکردگی ہے۔

ہندوستان کو پہلی اننگز میں 145 رن پر سمیٹنے کے بعد جوش میں آئی انگلینڈ کی ٹیم ایک مرتبہ پھر ہندوستان کے اسپنروں کے سامنے بے بس نظرآئی۔ اپنی دوسری اننگز میں ایک بڑا اسکور بناکر ہندوستان کو جیت کے لئے بڑا ہدف دینے کی امید کے ساتھ میدان پر اترے انگلینڈ کے خلاف اسپنروں کے جال میں پھنس گئے۔ دوسری اننگز میں پہلی ہی گیند پر انگلینڈ کا پہلا وکٹ گرا۔ پہلی اننگز کے ہیرو اکشر پٹیل نے جہاں پر پہلی اننگز ختم کی تھی، وہیں سے دوسری اننگز کی شروعات کی اور پہلی گیند پر سلامی بلے باز جیک کرولی کو بولڈ کردیا جو پہلی اننگز میں انگلینڈ کے سب سے زیادہ رن بنانے والے کھلاڑی تھے۔ اس کے بعد دوسری گیند پر جان بیرسٹو کو ایل بی ڈبلیو آؤٹ کرکے اکشر اپنی پہلی ٹسٹ ہیٹ ٹرک کا جشن منا ہی رہے تھے کہ تیسرے امپائر نے ریویو کی بنیاد پر بیرسٹو کو ناٹ آوٹ قرار دے دیا۔ حالانکہ اکشر نے تیسری بال پر بیرسٹو کو بولڈ کرکے پویلین کا راستہ دکھایا۔

دو ٹاپ آرڈر کے بلے بازوں کے صفر پر آوٹ ہونے کے بعد ڈومنک سبلے اور کپتان جوروٹ نے مورچہ سنبھالا لیکن اکشر کی اسپن گیندبازی کے سامنے انہوں نے گھٹنے ٹیک دیئے۔ سبلے اکشر کا تیسرا شکار بنے۔ اور وکٹ کیپر رشبھ پنت کے ہاتھوں سات رن بناکر پویلین لوٹ گئے۔ اس کے بد تجربہ کار آل راؤنڈر بین اسٹوکس نے کپتان روٹ کے ساتھ شراکت کی ۔ انگلینڈ کی ٹیم کی گاڑی پٹری پر لوٹ ہی رہی تھی کہ اشون نے اسٹوک کو 25 رن پر ایل بی ڈبلیو کرکے انگلینڈ کو بڑا جھٹکا دیا۔ اس کے فوراً بعد روٹ بھی 19 رن پر اکشر کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہوگئے۔ روٹ کی شکل میں انگلینڈ کو پانچواں جھٹکا لگا۔

آدھی ٹیم کے پویلین لوٹنے کے بعد ساری امیدوں اولی پوپ اور وکٹ کیپر بین فوکس پر ٹکی ہوئی تھیں۔ دونوں کھلاڑیوں نے کریز پر ٹھہرنے کی کوشش کی لیکن اکشر اور اشون کی لاجواب گیندبازی کے سامنے وہ بے بس نظرآئے۔ اشون نے پوپ کو 12 رن پر بولڈ کیا۔ فوکس آٹھ رن بناکر اکشر کی گیند پر ایل بی ڈبلیو آؤٹ ہوگئے۔ پھر اشون نے آرچر کو صفر پر پویلین بھیجا۔ آرچر کا وکٹ حاصل کرنے کے ساتھ ہی اشون نے اپنی 400 ٹسٹ وکٹیں بھی مکمل کیں۔ جیک لچ کو 9 رن پر آؤٹ کرکے اشون نے دوسری اننگز میں چوتھی وکٹ لی۔ جاتے جاتے واشنگٹن سندر نے بھی اپنا کھاتہ کھولا اور جیمس اینڈرسن کو صفر پرآؤٹ کرکے ایک وکٹ اپنے نام کیا۔

x

Check Also

ہندوستان کے سامنے بے بس ہوا انگلینڈ، دوسری اننگ میں محض 53 رن پر 3 کھلاڑی آؤٹ

اسٹار آف اسپنر روی چندرن اشون نے پہلی اننگز میں پانچ وکٹ ...