بنیادی صفحہ / قومی / مغربی بنگال : وزیر اعلی ممتا بنرجی نے تسلیم کئے ڈاکٹروں کے سبھی مطالبات ، کام پر لوٹنے کی اپیل

مغربی بنگال : وزیر اعلی ممتا بنرجی نے تسلیم کئے ڈاکٹروں کے سبھی مطالبات ، کام پر لوٹنے کی اپیل

Print Friendly, PDF & Email

وزیرا علیٰ ممتا بنرجی نے ایک بار پھر جونیئر ڈاکٹروں سے ہڑتال ختم کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کی حکومت ہڑتال میں شامل ڈاکٹروں کے خلاف ای ایس ایم اے کے تحت کارروائی نہیں کرے گی۔خیال رہے کہ گزشتہ پانچ دنوں سے جاری ہڑتال کی وجہ سے ریاست کے اسپتالوں میں حالات نازک بن گئے ہیں۔ جونیئرڈاکٹروں کے ذریعہ وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی کی دعوت کو رد کیے جانے کے بعد پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیرا علیٰ نے کہا کہ قانون ہونے کے باوجود ہم اس کااستعمال نہیں کریں گے اور نہ ہی ہم کوئی سخت کارروائی کرنے کے حق میں ہے۔مگر جونیئر ڈاکٹروں سے اپیل ہے کہ وہ ہڑتال کو ختم کرکے فوری طور پر اسپتال میں حالات معمول پر لائیں۔مریضوں کو سخت مشکلات کا سامنا ہے۔

ای ایس ایم اے کے تحت پوسٹ آفس، ریلوے، ائیرپورٹ اور اسپتال کے عملے کو ہڑتال کرنے سے روکا گیا ہے۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ دوسری ریاستوں میں اس ایکٹ کے تحت ڈاکٹروں کے خلاف کارروائی ہوتی ہے۔جب کہ بنگال حکومت نے اب تک کوئی کارروائی نہیں کی ہے اور نہ ان کے کیئریر کو نقصان پہنچایا ہے۔وزیرا علیٰ نے کہا کہ ریاستی حکومت نے ان کے سارے مطالبات تسلیم کیے ہیں اور مزید مطالبات کو تسلیم کرنے کو تیار ہیں مگر انہیں جلد سے جلد کام پر لونٹا ہوگا۔

 ممتا بنرجی نے کہا کہ کل جمعہ کو پانچ گھنٹے تک جونیئر ڈاکٹروں کا انتظار کرتی رہی، میں نے اپنے تمام پروگرام کو رد کردیا۔مگر ڈاکٹروں کو بھی آئینی اداروں کا احترام کرنا ہوگا۔ڈاکٹروں کے اجتماعی استعفیٰ پر وزیرا علیٰ نے کہا کہ یہ قانونی طور پر معبتر نہیں ہے۔ممتا بنرجی نے کہاکہ اگر جونیئر ڈاکٹر یہ سمجھتے ہیں کہ وہ مجھ سے بات نہیں کرسکتے ہیں تو وہ گورنر، چیف سیکریٹری اور کمشنر آف پولس سے بات کرسکتے ہیں۔اس سے قبل جونیئر ڈاکٹروں نے بند کمرے میں وزیرا علیٰ کے ساتھ بات چیت کرنے سے انکار کردیا تھا اور مطالبہ کیا تھاکہ وزیرا علیٰ این آر ایس میڈیکل کالج آئیں اور کھلے ماحول میں ہم سے بات چیت کریں۔

x

Check Also

مسلسل بارش سے مشرقی اترپردیش سمیت ریاست کے کئی اضلاع بری طرح متاثر

لکھنؤ: اتر پردیش میں مانسون کے دوبارہ فعال ہونے اور گزشتہ دو ...