بنیادی صفحہ / قومی / راج ناتھ کے بیان سے پی ایم مودی کی ’چوکیداری‘ پر سوالیہ نشان
فائل فوٹو

راج ناتھ کے بیان سے پی ایم مودی کی ’چوکیداری‘ پر سوالیہ نشان

Print Friendly, PDF & Email

اتر پردیش کے بلند شہر میں بی جے پی لیڈر اور مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے بڑا بیان دیا ہے۔ انھوں نے اپنے بیان سے مودی حکومت پر ہی سوال کھڑے کر دیے ہیں۔ انھوں نے عوامی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جب تک ملک میں کانگریس کی حکومت تھی تب تک نیرو مودی، میہل چوکسی اور وجے مالیا جیسے صنعت کار نہیں بھاگے، لیکن جیسے ہی ’چوکیدار‘ آیا وہ بھاگ گئے۔ انھوں نے پی ایم مودی کو چوکنا ’چوکیدار‘ بتایا۔ چوکنا ’چوکیدار‘ کہتے ہی راج ناتھ سنگھ نے پی ایم مودی کی حکومت پر سوال کھڑے کر دیے اور انھیں پتہ ہی نہیں چلا۔ سوال یہ ہے کہ اگر ’چوکیدار‘ چوکنا تھا تو یہ صنعت کار بھاگ کیسے گئے؟ انھیں تو جیل میں ہونا چاہیے تھا۔

غور طلب ہے کہ نیرو مودی، میہل چوکسی اور وجے مالیا جیسے صنعت کار ملک کے بینکوں کا ہزاروں کروڑ روپے لے کر بھاگ گئے تھے۔ یہ سبھی صنعت کار 2014 میں مودی کی حکومت آنے کے بعد ہی فرار ہوئے تھے۔ کانگریس پارٹی بھی یہ سوال پوچھتی رہی ہے کہ اگر مودی جی خود کو ’چوکیدار‘ کہتے ہیں تو ان کی چوکیداری میں ملک کا ہزاروں کروڑ روپے لے کر نیرو مودی، میہل چوکسی اور وجے مالیا کیسے بھاگ گئے؟

کانگریس کا یہ بھی الزام ہے کہ وجے مالیا جیسے صنعت کار تو وزیر مالیات ارون جیٹلی سے پارلیمنٹ میں ملاقات کر کے فرار ہوا تھا۔ کانگریس کا کہنا ہے کہ مالیا کے ملک چھوڑنے سے پہلے مودی حکومت کو اس بات کی جانکاری تھی۔ باوجود اس کے مودی حکومت نے وجے مالیا کو بھاگنے دیا۔ کانگریس کا الزام ہے کہ پہلے مودی حکومت نے ان صنعت کاروں کو ملک سے بھگایا اور اب وہ انھیں ملک واپس لانے کا ڈھونگ کر رہی ہے۔

x

Check Also

حکومت بھلے ہی اکثریت کی ہو، لیکن اتفاق رائے سے چلے گا ملک: وزیراعظم نریندرمودی کا تاریخی خطاب

وزیراعظم نریندرمودی نے دوسری بار تاریخی جیت درج کرنے کے بعد اپنے ...