بنیادی صفحہ / قومی / ہندوستانی فضائیہ کے لاپتہ طیارہ اے این 32 کا آٹھ دنوں بعد ملا ملبہ ، 13 افراد تھے سوار

ہندوستانی فضائیہ کے لاپتہ طیارہ اے این 32 کا آٹھ دنوں بعد ملا ملبہ ، 13 افراد تھے سوار

Print Friendly, PDF & Email

آسام کے جورہاٹ ہوائی اڈہ سے اڑان بھرنے والے ہندوستانی فضائیہ کے طیارہ اے این 32 کے ٹکڑے ملے ہیں ۔ نیوز ایجنسی اے این آئی کے مطابق طیارہ کے کچھ حصوں کا ملبہ اروناچل پردیش کے لیپو شہر میں ملا ہے ۔ یہ جگہ طیارہ کے اڑان والی جگہ سے 15-20 کلو میٹر شمال میں ہے ۔ زمین سے 12 ہزار فٹ کی انچائی پر ملبہ ملا ہے ۔ طیارہ کے باقی حصوں کی تلاش کیلئے سرچ آپریشن جاری ہے ۔ یہ طیارہ تین جون کو آسام کے جورہاٹ سے اڑا تھا اور لاپتہ ہوگیا تھا ۔ طیارہ میں عملہ کے 8 اراکان سمیت 13 افراد سوار تھے ۔

ہندوستانی فضائیہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ جس علاقہ میں تلاش کی جارہی تھی ، وہاں آئی اے ایف ایم آئی 17 ہیلی کاپٹر کے ذریعہ ممکنہ اے این 32 کا ملبہ آج 16 کلو میٹر شمال میں تقریبا 12000 فٹ کی اونچائی پر دیکھا گیا ۔

فضائیہ کے ریٹائرڈ ائیر مارشل پی ایس اہلووالیہ نے نیوز 18 کو بتایا کہ پہاڑیوں اور جنگلات سے بھرا علاقہ ہونے کی وجہ سے طیارہ کا پتہ لگانا مشکل ہوجاتا ہے ، اسی وجہ سے اس کو ڈھونڈنے میں آٹھ دنوں کا وقت لگ گیا ۔

خیال رہے کہ اس سے پہلے ہندوستانی فضائیہ نے طیارہ کی جانکاری دینے والے شخص کو 5 لاکھ روپے انعام دینے کا اعلان کیا تھا ۔ یہ اعلان ائیر مارشل آر ڈی ماتھر اے او سی ان کمانڈ ایسٹرن ائیر کمانڈ نے کیا تھا ۔ انہوں نے کہا تھا کہ لاپتہ اے این 32 کی پختہ جانکاری دینے والے شخص یا گروپ کو یہ انعام دیا جائے گا ۔

x

Check Also

بابری مسجد مقدمہ: سپریم کورٹ سنائے گا فیصلہ یا ثالثی سے نکلے گا حل! تجسس برقرار

بابری مسجد – رام جنم بھومی مقدمہ میں ثالثی کے دوسرے دور ...