بنیادی صفحہ / قومی / بی جے پی حکمراں ریاستوں میں سَرکاری مشینری کا غلط استعمال عروج پر: مایاوتی

بی جے پی حکمراں ریاستوں میں سَرکاری مشینری کا غلط استعمال عروج پر: مایاوتی

Print Friendly, PDF & Email

بی ایس پی صدر مایاوتی نے پی ایم مودی پر حملہ آور رخ اختیار کرتے ہوئے آج یکے بعد دیگرے کئی ٹوئٹ کیے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ’’یو پی سمیت ملک کی جن ریاستوں میں بھی بی جے پی کی حکومتیں ہیں، وہاں انتخاب میں سرکاری مشینری کا غلط استعمال عروج پر ہے۔ خاص کر ووٹ والے دن تو سبھی حدیں لانگھ دی جاتی ہیں۔ یو پی، مہاراشٹر، تریپورہ وغیرہ اس کی خاص مثالیں ہیں۔ پھر بھی انتخابی کمیشن اس کا نوٹس کیوں نہیں لے رہا ہے؟

 انھوں نے ایک دیگر ٹوئٹ میں لکھا ہے کہ ’’پی ایم مودی کو معلوم ہے کہ ہر حکومت کی سازشوں کے باوجود ان کی تاناشاہ حکومت جا رہی ہے۔ اسی لیے وہ غیر بی جے پی ریاستوں میں غیر اخلاقیات، تشدد وغیرہ کے ساتھ ساتھ اپوزیشن کے سرکردہ لیڈروں کو بھی سی بی آئی، ای ڈی، آئی ٹی وغیرہ سرکاری مشینری کے ذریعہ خوفزدہ کرنے میں لگے ہوئے ہیں۔‘‘

 مایاوتی نے مودی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے یہ بھی لکھا کہ ’’اور ابھی حال ہی میں ان کا عوام مخالف غرور اتنا سر چڑھ کر بولا کہ انھوں نے مغربی بنگال میں ترنمول کانگریس کے 40 اراکین اسمبلی توڑ کر ممتا بنرجی حکومت گرانے کی کھلے عام دھمکی بھی دے ڈالی جو سیاسی سازش کا عروج ہے۔ اس کے لیے بنگال اور ملک کی عوام انھیں کبھی معاف کرنے والی نہیں ہے۔‘‘

 واضح رہے کہ گزشتہ دنوں پی ایم مودی نے مغربی بنگال میں ریلی کے دوران دعویٰ کیا تھا کہ ٹی ایم سی کے 40 اراکین اسمبلی ان کے رابطے میں ہیں اور انتخاب کے بعد وہ اپنی پارٹی چھوڑ دیں گے۔

x

Check Also

کیا 2000 کی کرنسی بند ہونے والی ہے؟ اس سوال سے عوام پریشان

ایک نیو ز ویب سائٹ کے مطابق سوشل میڈیا پر وائرل ہو ...