بنیادی صفحہ / قومی / اب خواجہ معین الدین چشتی یونیورسٹی کانام تبدیل کرنے کی تجویز! اردو داں طبقہ میں بے چینی

اب خواجہ معین الدین چشتی یونیورسٹی کانام تبدیل کرنے کی تجویز! اردو داں طبقہ میں بے چینی

Print Friendly, PDF & Email

اترپردیش کے گورنر وریاستی یونیورسٹیوں کی چانسلر آنندی بین پٹیل نے خواجہ معین الدین چشتی اردو عربی فارسی یونیورسٹی کا نام تبدیل کرنے کی تجویز پیش کرتے ہوئے وزیر تعلیم و نائب وزیر اعلی ڈاکٹر دنیش شرما سے کہا کہ وہ اس ضمن میں مناسب کاروائی کریں۔

ریاستی راجدھانی لکھنؤ کے سیتا پور ہردوئی پاس پر واقع خواجہ معین الدین چشتی اردو عربی، فارسی یونیورسٹی میں منعقد چوتھے سالانہ جلسہ تقسیم اسناد پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے گورنر آنندی بین پٹیل نے کہا کہ خواجہ معین الدین چشتی اردو ۔عربی، فارسی یونیورسٹی کے نام میں اردو۔عربی، فارسی کی کوئی ضرورت نہیں ہے کیونکہ یہاں ہرقسم کی تعلیم دی جاتی ہے

جلسہ تقسیم اسنادسے خطاب کرتے ہوئے آنندی بین نے کہا کہ یہاں آنے سے پہلے یونیورسٹی کا نام سن کر میرا خیال تھا کہ یہاں پر صرف اردو۔عربی، فارسی زبان کی ہی تعلیم دی جاتی ہوگی لیکن جب وہ یہاں آئیں تو پتہ چلا کہ ان زبانوں کے ساتھ یہاں کامرس، کمپیوٹر، صحافت اور تعلیمات کی بھی تعلیم جاتی ہے۔

x

Check Also

وزیر اعظم مودی سے ملاقات میں مذہبی آزادی اور اقلیتوں کا مدعا اٹھائیں گے صدر ڈونلڈ ٹرمپ: وائٹ ہاؤس

واشنگٹن۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ (Donald Trump) اگلے ہفتے ہونے والے ہندوستان دورے کے ...