بنیادی صفحہ / قومی / مودی حکومت کی افسران پر کارروائی جاری، مزید 15 افسران کو جبری ریٹائرمنٹ

مودی حکومت کی افسران پر کارروائی جاری، مزید 15 افسران کو جبری ریٹائرمنٹ

Print Friendly, PDF & Email

مودی حکومت کی طرف سے حال ہی میں وزارت خزانہ سے جڑے 12 اعلی افسران کو لازمی طور پر ریٹائر کرنے کے بعد اب مزید 15 افسران پر گاج گری ہے۔ حکومت نے سی بی آئی سی سے وابستہ مزید 15 اعلیٰ افسران کو جبری ریٹائرمنٹ دے کر گھر بھیج دیا ہے۔

حکومت نے سی بی آئی سی (سینٹرل بورڈ آف اِن ڈائریکٹ انڈ کسٹمس) کے 15 انتہائی اعلی افسران کو (جن میں پرنسپل کمشنر، کمشنر، ایڈیشنل کمشنر اور ڈپٹی کمشنر شامل ہیں) کو اصول 56 (جے) کے تحت جبری ریٹائرمنٹ لینے کے احکامات صادر کر دیئے۔ سی بی آئی سی بھی وزارت خزانہ کے ہی ماتحت آتا ہے۔

 حکومت کی طرف سے اتنے بڑے پیمانے پر اعلیٰ افسران پر کارروائی سے ہلچل پیدا ہو گئی ہے۔ واضح رہے کہ اس سے قبل 10 جون کو 12 افسران پر کارروائی کرتے ہوئے ان سے استعفیٰ مانگ لیا گیا تھا۔

ان تمام افسران پر عہدے پر رہنے کے دوران رول بک کے خلاف کام کرنے کا الزام ہے۔ میڈیا رپورٹوں کے حوالہ سے کہا جا رہا ہے کہ وزارت خزانہ کی طرف سے یہ کارروائی اصول 56 کے تحت کی گئی ہے۔

مودی حکومت کی طرف سے چند دنوں کے اندر دو مرتبہ اعلیٰ افسران پر کی گئی کارروائی کی وجہ سے افسران کے درمیان ایک خوف نظر آنے لگا ہے۔ افسران شدت سے یہ محسوس کر رہے ہیں کہ حکومت کی پالیسی یک دم بالکل تبدیل ہو چکی ہے اور آگے بھی کب کس افسر پر گاج گرے گی یہ کہا نہیں جا سکتا۔

 افسران جن پر کارروائی کی گئی:
  • ڈاکٹر انوپ شریواستو، پرنسپل کمشنر
  • اتل دیکشت، کمشنر
  • سنسار چند، کمشنر
  • جی شری ہرشا، کمشنر
  • وجے برج سنگھ، کمشنر
  • اشوک آر مہیدا، اڈیشنل کمشنر
  • ویریندر کمار اگروال، اڈیشنل کمشنر
  • امریش جین، ڈپٹی کمشنر
  • نلن کمار، جوائنٹ کمشنر
  • ایس ایس پبانا، اسسٹنٹ کمشنر
  • ایس ایس بشٹ، اسسٹنٹ کمشنر
  • وریندر کمار سنگا، اسسٹنٹ کمشنر
  • راجو سیکر، اڈیشنل کمشنر
  • اشوک کمار اسوال، ڈپٹی کمشنر
  • محمد الطاف، اسسٹنٹ کمشنر
x

Check Also

ممبئی: ایم ٹی این ایل کی عمارت میں خطرناک آتشزدگی، 100 لوگ پھنسے

مہاراشٹر کے ممبئی میں پیرکو ایک نومنزلہ عمارت میں آگ لگ گئی۔ ...