بنیادی صفحہ / قومی / کورونا وائرس کا قہر اور لاک ڈاؤن : بی سی جی رپورٹ کیاہے؟ کیا ہندوستان میں ہوگا ایسا؟

کورونا وائرس کا قہر اور لاک ڈاؤن : بی سی جی رپورٹ کیاہے؟ کیا ہندوستان میں ہوگا ایسا؟

Print Friendly, PDF & Email

امریکی منیجمنٹ کنسلٹنسی ادارہ بوسٹن کلسنٹنسی گروپ ( BCG) ایک ایسا عالمی شہرت یافتہ ادارہ ہے جو تجارت اور مارکیٹس کے رجحانات اور اُتار چڑھاؤ کی پیشن گوئی کرنے میں ماہر و معتبر نام سمجھا جاتا ہے۔ بی سی جی نے کورونا وائرس سے پھیلی وباء کے بعد اسکے عالمی اثرات کا مطالعہ کرتے ہوئے ہندوستان کے بارے میں یہ پیشن گوئی کی ہے کہ ملک میں جاری لاک ڈاؤن کا جون ۔ جولائی تک جاری رہ سکتا ہے۔بی سی جی کا ماننا ہے کہ ہندوستان میں کووڈ 19 کے کیسیز کے بتدریج بڑھنے کا عمل جون کے تیسرے ہفتہ تک جاری رہے گا ۔

بی سی جی نے چین کے کورونا سے لڑنے کے تجربہ کو اپنی تحقیق کی بنیاد کے طور پر اپنایا ۔ کسی ملک سے متعلق بی سی جی کی پیشن گوئی کا دارو مدار ، اس ملک کی مجموعی صلاحیت پر رکھ گیا ہے جس میں صحت سے متعلق وسائل اور سرکاری پالیسی شامل ہے ۔ہندوستان میں تین اپریل تک نمودار ھونے والے کرونا کے کیسز کا مطالعہ کرنے کے بعد بی سی جی اس نتیجہ پر پہنچا کہ ہندوستان کے لیے بہتر ہوگا و ہ ستمبر تک لاک ڈاؤن بر قرار رکھے ۔تلنگانہ کے وزیراعلیٰ کے چندرشیکھرراؤ نے ملک اور ریاست میں کورونا کے لگاتار بڑھتے ہوئے کیسیز پر تشویش کااظہارکیاہے۔

کے چندراشیکھرراؤ نے وزیر اعظم نریندر مودی سے اپیل کی کہ لاک ڈاؤن کی معیاد میں دو ہفتوں کی توسیع دیں ۔کے سی آر نے کہا کہ کورونا سے لڑائی کا واحد ہتھیارسوشل ڈسٹانسنگ ہی ہے ۔ انہوں نے اس سلسلہ میں ترقی یافتہ امریکہ اور یورپ کی مثال دی اور کہا کہ اس بیماری کا موثر علاج سماجی طور پر الگ تھلگ رہنا ہے ۔ وہ فی الحال جاری لاک ڈاؤن کے توسیع کے حق میں ہیں ۔ اس سلسلہ میں انہوں نے بوسٹن کلسنٹنسی گروپ کی رپورٹ کا حوالہ بھی دیا ۔ بی سی جی نے20 ممالک کو اپنی تحقیق میں شامل کیا ۔

x

Check Also

ریلوے نے ٹرین ٹکٹ بکنگ کے ضابطوں میں کی تبدیلی، جانیں تفصیل

کورونا کی وجہ سے لوگوں کی زندگی اب پہلے جیسی نہیں رہی ...