بنیادی صفحہ / قومی / ہندوستانی مسلمان نریندر مودی کی حکومت میں زیادہ محفوظ ہیں: مختار عباس نقوی کا دعویٰ

ہندوستانی مسلمان نریندر مودی کی حکومت میں زیادہ محفوظ ہیں: مختار عباس نقوی کا دعویٰ

Print Friendly, PDF & Email

بی جے پی کے سینئر لیڈر اور اقلیتی امور کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے دعویٰ کیا ہے کہ ہندوستان میں نریندر مودی کی سرکار میں مسلمان سب سے زیادہ محفوظ ہیں۔ یہاں کرگل میں ایک انتخابی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مختار عباس نقوی نے کہا ‘ہندوستان میں مسلمان نریندر موودی کی سرکار میں سب سے زیادہ محفوظ ہیں اور مودی کے مشن سب کا ساتھ، سب کا وکاس نے سماج کے تمام طبقوں کے ساتھ بلا لحاظ مذ ہب و ذات انصاف کیا ہے’۔

نیشنل کانفرنس اور کانگریس کو ہدف تنقید بناتے ہوئے انہوں نے کہا ‘اگر ان جماعتوں کی سرکاروں نے جموں کشمیر کے لئے واگذار کی جانے والی رقوم کا صرف 20فیصدی ترقیاتی کاموں پر ایمانداری سے صرف کیا ہوتا تو کشمیر میں ایک بھی مسئلہ نہیں ہوتا لیکن جن لوگوں نے کافی عرصہ تک یہاں حکومت کی انہوں نے عوام کی بہبود کے بجائے اپنی تجوریاں بھرلیں’۔ نقوی نے کہا کہ گذشتہ پانچ برسوں کے دوران ملک کے کسی بھی حصے میں فرقہ وارانہ فساد کا ایک بھی واقعہ رونما نہیں ہوا اور کشمیر کی ایک دو جگہوں کو چھوڑ کر ملک میں دہشت گردی کا بھی کوئی واقعہ پیش نہیں آیا۔

 انہوں نے کہا کہ کشمیر اور کشمیری لوگوں کے لئے امن اور ترقی بہت ضروری ہے اور مودی جی نے ملک کے تمام لوگوں بلا لحاظ مذہب وملت وذات پات کی ترقی کے لئے ایک شاہراہ اختیار کی ہے جس کی وجہ سے کنیا کماری سے کرگل تک مودی کی ترقی کا ڈنکا بج رہا ہے۔ نقوی نے کہا کہ مودی حکومت نے گذشتہ پانچ برسوں کے دوران ریاست میں 2 لاکھ کروڑ مالیت کے پروجیکٹوں کو شروع کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کے لاکھوں لوگوں نے مرکز کی طرف سے لانچ کی گئی کئی فلاحی اسکیموں سے فائدہ اُٹھایا ہے۔
x

Check Also

ہندوستان میں ہندوؤں کی وجہ سے سب سے زیادہ خوش ہیں مسلمان: موہن بھاگوت

اڑیسہ کے بھونیشور میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سنگھ سربراہ ...