بنیادی صفحہ / تازہ خبریں / پہلوخان موب لنچنگ معاملے میں دوبارہ ہوگی جانچ، گہلوت حکومت نےدیئےاحکامات

پہلوخان موب لنچنگ معاملے میں دوبارہ ہوگی جانچ، گہلوت حکومت نےدیئےاحکامات

Print Friendly, PDF & Email

راجستھان کے الورموب لنچنگ میں سال 2017 میں ہجوم کے ذریعہ مارے گئے پہلو خان معاملے میں اب دوبارہ جانچ ہوگی۔ راجستھان حکومت نے جانچ کے احکامات دیئے ہیں۔ واضح رہے کہ الورعدالت نے بدھ  کو6 ملزمین کوبری کیا تھا۔

پہلوخان موب لنچنگ معاملے پرعدالت کے فیصلے کے خلاف کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے جمعہ کوٹوئٹ کیا تھا۔ پرینکا گاندھی نے ٹوئٹ کرکے کہا ‘پہلوخان معاملے میں نچلی عدالت کا فیصلہ حیران کردینے والا ہے’۔ ہمارے ملک میں غیرانسانی حرکتوں کی کوئی جگہ نہیں ہونی چاہئے اوربھیڑکے ذریعہ قتل ایک خطرناک جرم ہے۔

اشوک گہلوت حکومت کی تعریف کرتے ہوئے پرینکا گاندھی واڈرا نے کہا کہ راجستھان حکومت کے ذریعہ ہجومی تشدد کے خلاف قانون بنانے کی پہل قابل تعریف ہے۔ امید ہے کہ پہلو خان معاملے میں انصاف دلاکراس کی اچھی مثال پیش کی جائے گی۔

یکم اپریل 2017 کو ہوا تھا حادثہ

واضح رہے کہ یکم اپریل 2017 کو بہریڑمیں جے پورکے ہٹ واڑے سے گائےلے کر جا رہے ہریانہ کے نوح میواتی باشندہ پہلو خان اوراس کے بیٹوں عمراورطاہرکی بھیڑنے جم کر پٹائی کی تھی۔ پولیس نےان کوبھیڑسے چھڑا کربہریڑ کے کیلاش اسپتال میں داخل کرایا تھا۔ وہاں علاج کے دوران پہلو خان کی 4 اپریل، 2017 کو موت ہوگئی تھی۔ اس معاملے میں عدالت میں چالان کے بعد باضابطہ سماعت ہوئی تھی۔ اس معاملے میں گزشتہ روزالورکی نچلی عدالت نےبدھ کو6 ملزمین کوبری کیا تھا۔

x

Check Also

تصاویر: بھٹکل میں یوم اساتذہ کا انعقاد