بنیادی صفحہ / تازہ خبریں / گوا میں کانگریس نے پیش کیا حکومت بنانے کا دعویٰ، کہا- ‘بی جے پی کے پاس اکثریت نہیں’۔

گوا میں کانگریس نے پیش کیا حکومت بنانے کا دعویٰ، کہا- ‘بی جے پی کے پاس اکثریت نہیں’۔

Print Friendly, PDF & Email

گوا میں طویل وقت سے جاری سیاسی رسہ کشی کے درمیان کانگریس نے ہفتہ کو حکومت بنانے کا دعویٰ پیش کیا۔ کانگریس نے گورنرمردلا سنہا کوخط لکھ کربی جے پی کی قیادت والی ریاستی حکومت کوتحلیل کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ کانگریس نے دعویٰ کیا ہے کہ اسمبلی میں بی جے پی کے پاس اکثریت نہیں ہےاورکانگریس سب سے بڑی پارٹی ہے، اس لئے کانگریس کوحکومت سازی کا موقع دیا جانا چاہئے۔

اس خط میں کانگریس نے یہ بھی لکھا ہے کہ گوا میں صدرراج نافذ کرنے کی کوئی بھی کوشش غیرقانونی ہوگی اورکانگریس اسے عدالت میں چیلنج کرے گی۔ اپوزیشن لیڈرچندر کانت کولیکرکی طرف سے بھیجےگئےاس خط میں لکھا ہے’منوہرپاریکرکی قیادت والی حکومت عوام کا اعتماد کھوچکی ہے، ساتھ ہی ساتھ وہ اسمبلی میں اکثریت کھوچکی ہے’۔ انہوں نے لکھا کہ انہیں اعتماد ہے کہ گورنرآئین کے اصولوں پرعمل کریں گی’۔

 واضح رہے کہ گوا کے وزیراعلیٰ منوہرپاریکرطویل وقت سے بیمارچل رہے ہیں۔ پینکریاٹک کینسرسے متاثرہ 61 سالہ پاریکرکو31 جنوری کوآل انڈیا میڈیکل انسٹی ٹیوٹ (ایمس) میں داخل کرایا گیا تھا۔ حال ہی میں بیماروزیراعلیٰ نے تین مارچ کوگوا میڈیکل کالج اوراسپتال (جی ایم سی ایچ) میں چیک اپ کرایا تھا۔ فروری میں پاریکرکا جی ایم سی ایچ میں ایک آپریشن بھی ہوا تھا۔

ہفتہ کووزیراعلیٰ دفترنے منوہرپاریکرکی صحت کولےکرجاری افواہوں کے پیش نظرٹوئٹ کیا ‘میڈیا میں کچھ رپورٹوں کے متعلق یہ واضح کیا جاتا ہے کہ وزیراعلیٰ پاریکرکی حالت مستحکم ہے۔ اس سے قبل اپوزیشن نےکہا تھا کہ پاریکرکوان کی بیماریوں کے سبب ان کی ذمہ داریوں سے آزاد کردیا جانا چاہئے۔ حالانکہ گوا کے وزیرتوانائی نلیش کیبرل نے جمعرات کوایک پریس کانفرنس میں کہا کہ منوہرپاریکرآئندہ الیکشن کے لئے گوا بی جے پی کی مہم کی رہنمائی کریں گے۔ واضح رہےکہ کئی مواقع پرپاریکرمیڈیکل پیرافرنولیا پہنے عوامی طورپرسامنے آئے ہیں۔

x

Check Also

پہلوخان موب لنچنگ معاملے میں دوبارہ ہوگی جانچ، گہلوت حکومت نےدیئےاحکامات

راجستھان کے الورموب لنچنگ میں سال 2017 میں ہجوم کے ذریعہ مارے ...