بنیادی صفحہ / تازہ خبریں / چھوٹ کے ساتھ جاری رہیں گی پابندیاں، ایک نظر میں جانیں کیا کھلے گا اور کیا رہے گا بند

چھوٹ کے ساتھ جاری رہیں گی پابندیاں، ایک نظر میں جانیں کیا کھلے گا اور کیا رہے گا بند

Print Friendly, PDF & Email

نئنئی دہلی. کورونا وائرس (Coronavirus) کے خطرے کے پیش نظر مرکزی حکومت (Government) نے لاک ڈاؤن (Lockdown)کی مدت کو 30 جون تک دیا ہے۔ حکومت نے لاک ڈاؤن 5.0 کی گائیڈ لائن بھی جاری کردی ہے۔ اس لاک ڈاؤن کو تین مراحلوں میں تقسیم کیا گیا ہے اور اس کا نام انلاک -1 (Unlock-1) رکھا گیا ہے۔ وہیں اس مرتبہ حکومت نےکنٹینمنٹ زون کے باہر اسے مرحلہ وار طریقے سے چھوٹ دی ہے۔

ان لاک ون میں ملے گی یہ چھوٹ

وزارت داخلہ کی جانب سے جاری گائیڈ لائن کے مطابق ان لاک ون میں ایک سے دوسری ریاست میں آنے جانے کیلئے کسی بھی طرح کے پاس کی ضرورت نہیں ہوگی ۔

مندر ، مسجد ، گرودوار ، چرچ کھول دئے جائیں گے ۔ ان لاک ون میں 8 جون سے ریستوراں کھل جائیں گے ۔

نئے گائیڈ لائنس کے مطابق ملک کے سبھی حصوں میں رات کو 9 بجے سے صبح پانچ بجے تک اب رات کا کرفیو رہے گا ۔ حالانکہ ضروری سامان کیلئے کسی بھی طرح کا کرفیو نہیں رہے گا ۔ ابھی تک یہ شام سات بجے سے صبح سات بجے تک تھا ۔

اب ان لاک ون کے دوسرے مرحلہ میں اسکول ، کالج کھولنے پر سرکار فیصلہ لے گی ۔ ریاستی حکومتوں کو اس فیصلہ کیلئے مجاز بنایا گیا ہے۔

ان لاک ون کے ہوں گے تین مراحل

مرحلہ نمبر ایک ( 8 جون کے بعد یہ مقامات کھل سکیں گے ) ۔
مذہبی مقامات ، عبادت کی جگہیں
ہوٹل ، ریستوران اور ہاسپٹیلیٹی سے وابستہ سروسیز
شاپنگ مالس
وزارت صحت اس کیلئے اسٹینڈرڈ آپریٹنگ پروسیجر جاری کرے گی ۔ تاکہ سماجی فاصلہ کے فارمولہ پر اچھی طریقہ سے عمل کیا جاسکے ۔
مرحلہ نمبر دو
ریاستی حکومت سے صلاح و مشورہ کے بعد اسکول ، کالج ، ایجوکیشن ، ٹریننگ اور کوچنگ انسٹی ٹویٹ کھل سکیں گے ۔
تعلیمی اداروں کو کھولنے کا فیصلہ ریاستی حکومتیں اداروں سے وابستہ لوگ اور بچوں کے والدین سے بات چیت کرکے کرسکتی ہیں ۔
ریاستی حکومت سے فیڈ بیک ملنے کے بعد ان اداروں کو کھولنے کا فیصلہ جولائی میں لیا جاسکتا ہے ۔ اس کیلئے وزارت صحت اسٹینڈرڈ آپریٹنگ پروسیجر جاری کرے گی ۔
مرحلہ نمبر تین
مندرجہ ذیل سرگرمیوں کو پھر سے شروع کرنے کیلئے حالات کا جائزہ لینے کے بعد فیصلہ کیا جائے گا ۔
انٹرنیشنل فلائٹس ۔
میٹرول ریل ۔
سنیما ہال ، جم ، سوئمنگ پول ، انٹرٹینمنٹ پارک ، تھیئیٹر ، بار ، آڈیٹوریم ، اسمبلی ہال اور ان جیسی جگہیں ۔
سماجی ، سیاسی ، اسپورٹس انٹرٹینمنٹ ، اکیڈمک ، ثقافتی پروگرام اور باقی بڑے جشن پر فیصلہ حالات کا جائزہ لینے کے بعد کیا جائے گا ۔
لاک ڈاون پانچ میں کیا ہیں چیلنجز
لاک ڈاون پانچ میں ملک کے سامنے دو چیلنجز ہیں ۔ ایک طرف اقتصادی سرگرمیوں میں چھوٹ کے ذریعہ معیشت کو دوبارہ پٹری پر لانے کی کوشش ہوگی تو وہیں دوسری طرف تیزی سے پھیل رہے کورونا وائرس کو بھی قابو کرنا ہوگا ۔
مرکزی حکومت نے کوروناوائرس لاک ڈاؤن پر لوگوں کو بڑی راحت دی ہے۔ حکومت نے سنیچر کو لاک ڈاؤن (Lockdown) کو لؤکھولنے کیلئے ان لاک-1 (Unlock 1) جاری کیا ہے۔ ان لاک ون (Unlock 1) کیلئے وزارت داخلہ نے سنیچر کو نئی گائڈ لائن جاری کی ہیں۔ نئی گائڈ لائنس کے مطابق کنٹینمینٹ زون میں اب بھی پوری طرح سے پابندی رہے گی لیکن باقی جگہوں پر دھیرے۔دھیرے چھوٹ دی جائے گی۔ یہ گائیڈ لائنس 1 جون سے 30 تک کیلئے رہیں گی۔ آیئے جانتے ہیں ان لاک ون کی دس بڑی باتیں۔۔
نئی گائیڈ لائنس کے مطابق اب رات 9 بجے سے صبح 5 بجے تک رات کا کرفیو جاری رہے گی۔ جو ضروری چیزیں ہیں۔ ان کے لئے کوئی کرفیو نہیں رہے گا۔ ابھی تک یہ شام 7سے 7 بجے تک تھا۔
حکومت نے ریستوراں اور شاپنگ مال کھولنے کی اجازت دے دی ہے۔ پہلے مرحلے میں ، 8 جون 2020 سے ہوٹلوں ، ریستوراں ، شاپنگ مالز کو کھولنے کی اجازت ہوگی۔ بتادیں کہ لاک ڈاؤن ون 1 کے بعد سے ہوٹلوں ، ریستوراں ، شاپنگ مالز بند ہیں جسے 25 مارچ کو نافذ کیا گیا تھا۔
ان لاک کے دوسرے مرحلے میں اسکولوں ، کالجوں کو کھولنے پر غور کیا جائے گا۔ یہ فیصلہ جولائی کے مہینے کی صورتحال کے مطابق لیا جائے گا۔
وہیں ان لاک کے تیسرے مرحلے میں صورتحال پر غور کرتے ہوئے بین الاقوامی ہوائی سفر ، میٹرو ، سنیما ہال اور جم پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔
حکومت نے تمام مذہبی مقامات کو کھولنے کی اجازت دے دی ہے۔ اس سے قبل مغربی بنگال کی وزیر اعلی ممتا بنرجی نے تمام عبادت گاہوں مندروں ، مساجد اور گرودواروں کو کھولنے کی منظوری دی تھی۔ انہوں نے کہا کہ اس حکم کو یکم جون سے بنگال میں نافذ کیا جائے گا۔
اب ریاستوں اور ریاست کے اندر لوگوں اور سامان کی نقل و حرکت پر کوئی پابندی نہیں ہوگی۔ اس کے لئے الگ سے کوئی اجازت لینے کی ضرورت نہیں ہوگی۔
ضابطے کے مطابق، اسکول، سنیما ہال پر فیصلہ جولائی کے مہینے میں حالات کے حساب سے لیا جائے گا۔ رات 9 بجے سے صبح 5 بجے تک نقل وحرکت پر پابندی ہوگی۔ پہلے شام 7 بجے سے صبح 7 بجے تک پابندی رہے گی۔ حکومت نے اسے ان لاک 1.0 نام دیا گیا ہے۔ اسکول، کالج وغیرہ کھولنے کے لئے سبھی متعلقہ فریق سے بات کرکے جولائی میں فیصلہ لیا جائے گا۔
ملک میں یکم جون سے 30 جون تک لاک ڈاون جاری رہے گی۔ اس دوران ریاستی حکومتیں اسکول اور کالج کھولنے پر فیصلہ لیں گی۔ اس دوران کنٹنمنٹ زون پر پابندی جاری رہے گی۔ ملک میں 25 مارچ سے لاک ڈاون جاری ہے۔ مرکزی حکومت نے لاک ڈاون بڑھا دیا ہے۔ حالانکہ اس بار مزید چھوٹ دی گئی ہے۔ وزارت داخلہ نے کنٹنمنٹ زون کے باہر کے علاقوں کو پھر سے کھولنے کے لئے نئے احکامات جاری کئے ہیں۔ نیا حکم یکم جون سے نافذ ہوگا اور 30 جون تک موثر رہے گا۔ اس دوران لاک ڈاون کو کھولنے کا بھی عمل ہوگا۔ اس دوران اقتصادی سرگرمیوں پر فوکس رہے گا۔

x

Check Also

کرناٹک : مرسی اینجلس کو ایوارڈ دینے کے بعد بی بی ایم پی نے لیا واپس ، مچا ہنگامہ

بروہت بنگلورو مہانگر پالیکے(BBMP) کی جانب سے کورونا کے بہادروں کی توہین ...