بنیادی صفحہ / قومی / لوک سبھا الیکشن 2019 کا اعلان، 11 اپریل کو شروع ہوگی ووٹنگ، 23 مئی کو آئیں گے نتائج: کرناٹک میں 18/اپریل اور 23/اپریل کو ہوگا الیکشن
[adrotate banner="161"]

لوک سبھا الیکشن 2019 کا اعلان، 11 اپریل کو شروع ہوگی ووٹنگ، 23 مئی کو آئیں گے نتائج: کرناٹک میں 18/اپریل اور 23/اپریل کو ہوگا الیکشن

Print Friendly, PDF & Email

نیو دہلی : 10 مارچ،2019 (ایجنسیز) لوک سبھا الیکشن 2019 کے لئے تاریخوں کا باضابطہ اعلان ہوچکا ہے۔ دہلی  میں واقع وگیان بھون میں منعقدہ پریس کانفرنس میں  الیکشن کمیشن نے آج اعلان کردیا ہے کہ آئندہ لوک سبھا انتخابات کے لئے 7 مرحلوں میں ووٹنگ ہوگی۔ پہلے مرحلے کے لئے 11 اپریل کو ووٹنگ ہوگی جبکہ 23 مئی کو نتائج سامنے آئیں گے۔

چیف الیکشن کمشنر سنیل اروڑہ نے بتایا ہے کہ الیکشن کی تاریخوں کے اعلان کے ساتھ ہی آج سے ہی  ملک میں ضابطہ اخلاق نافذ ہوگیا ہے۔ اگرکوئی اس کی خلاف ورزی کرتا ہوا پایا جاتا ہے، تو اس کے خلاف کارروائی ہوگی۔  واضح رہے کہ موجودہ لوک سبھا الیکشن کی مدت تین جون 2019 کو ختم ہورہی ہے۔ ایسے میں تب تک نئی حکومت کی تشکیل ضروری ہوجاتی ہے۔ ا

اطلاع کے مطابق پہلے مرحلے میں 20 ریاستوں کی 91 سیٹیں، دوسرے مرحلے میں 13 ریاستوں کی 97 سیٹیں، تیسرے مرحلے میں 14 ریاستوں کی 115 سیٹیں، چوتھے مرحلے میں 9 ریاستوں کی 71 سیٹیں، پانچویں مرحلے میں 7 ریاستوں کی 51 سیٹیں، چھٹے مرحلے میں 7 ریاستوں کی 59 سیٹیں اورساتویں مرحلے میں 8 ریاستوں کی 59 سیٹوں پرالیکشن ہوں گے۔

پہلے مرحلے میں آندھرا پردیش، اروناچل پردیش،گوا، گجرات، ہریانہ، ہماچل پردیش، کیرلا، میگھالیہ، میزورم، ناگالینڈ، پنجاب، سکم، تلنگانہ، تمل ناڈو، اتراکھنڈ، انڈومان، دادرا- ناگرہویلی، دمن دیو، لکشدیپ،  دہلی،  پانڈوچیری میں ووٹنگ ہوگی۔

دوسرے مرحلے میں 18 اپریل کو آسام کی پانچ، بہارکی پانچ، چھتیس گڑھ کی تین، جموں وکشمیر کی دو، کرناٹک کی 14، مہاراشٹر کی 10، منی پور کی ایک، اوڈیشہ کی پانچ، تمل ناڈو کی 39، اترپردیش کی 8، مغربی بنگال کی تین اورپانڈوچیری کی ایک سیٹ پر ووٹ ڈالے جائیں گے۔

کرناٹک کی بقیہ 14/سیٹوں پر 23/اپریل کو ووٹنگ ہوگی۔

کرناٹک، منی پور، راجستھان، تری پورہ میں دو مرحلوں میں ووٹنگ ہوگی۔ آسام اورچھتیس گڑھ میں تین مرحلوں میں ووٹنگ ہوگی جبکہ جھارکھنڈ، مدھیہ پردیش، مہاراشٹر اوراوڈیشہ میں چار مرحلوں میں ووٹنگ ہوگی۔ جموں وکشمیر میں پانچ مرحلوں میں،  جبکہ بہار، مغربی بنگال اوراترپردیش میں 7 مرحلوں میں ووٹنگ ہوگی۔

تیسرے مرحلے میں 23 اپریل کو آسام کی چار، بہار کی پانچ، چھتیس گڑھ کی سات، گجرات کی 26، گوا کی دو، جموں وکشمیر کی ایک، کرناٹک کی 14، کیرلا کی 20، مہاراشٹر کی 14، اوڈیشہ کی 6، اترپردیش کی 10، مغربی بنگال کی پانچ، دادرا اورنگر ہویلی کی ایک، دمن ویو کی ایک سیٹ پرووٹنگ ہوگی۔

چوتھے مرحلے میں  29 اپریل کو بہار کی پانچ، جموں وکشمیر کی ایک، جھارکھنڈ کی تین، مدھیہ پردیش کی چھ، مہاراشٹر کی 17، اوڈیشہ کی چھ، راجستھان کی 13، اترپردیش کی 13 اورمغربی بنگال کی 8 سیٹوں پرووٹنگ ہوگی۔

پانچویں مرحلے میں 6 مئی کو بہارکی پانچ، جموں وکشمیر کی دو، جھارکھنڈ کی چار، مدھیہ پردیش کی 7، راجستھان کی 12، اترپردیش کی 14 اور مغربی بنگال کی 7 سیٹوں پر ووٹنگ ہوگی۔

چھٹے مرحلے میں 12 مئی کو بہارکی 8، ہریانہ کی 10، جھارکھنڈ کی 4، مدھیہ پردیش کی 8، اترپردیش کی 14، مغربی بنگال کی 8 اورقومی دارالحکومت دہلی کی سبھی سات لوک سبھا سیٹوں پرووٹنگ ہوگی۔

ساتویں اورآخری مرحلے میں 19 مئی کو بہار کی 8، جھارکھنڈ کی تین، مدھیہ پردیش کی 8، پنجاب کی 13، مغربی بنگال کی 9، چنڈی گڑھ کی ایک، اترپردیش کی 13 اورہماچل پردیش کی 4 سیٹوں پر ووٹنگ ہوگی۔

آندھرا پردیش، اروناچل پردیش، سکم اوراوڈیشہ کے اسمبلی انتخابات کے لئے ووٹنگ وہاں ہونے والے لوک سبھا الیکشن کی تاریخوں پر ہی ہوگی۔ جبکہ تمل ناڈو سمیت تمام ریاستوں میں ضمنی انتخابات کے لئے ووٹنگ لوک سبھا الیکشن کے ساتھ ہی ہوگی۔ تمل ناڈو کی سبھی 21 خالی اسمبلی سیٹوں پر لوک سبھا الیکشن کے لئے ہونے والی ووٹنگ کے ساتھ ہی ہوگی۔

وزیراعظم نریندرمودی نے الیکشن کی تاریخوں کے اعلان کے ساتھ ہی ملک کے عوام سے بڑھ چڑھ کرانتخابات میں شامل ہونے کی اپیل کی ہے۔

چیف الیکشن کمشنر سنیل اروڑہ نے کہا ہے کہ ملک میں ضابطہ اخلاق نافذ ہوچکا ہے، کوئی بھی اس کی خلاف ورزی کرتا پایا جاتا ہے تو اس کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ مجرمانہ شبیہ والے امیدواروں کواپنے مجرمانہ ریکارڈ کی اطلاع دینی ہوگی۔ وہیں رات 10 بجے سے صبح 6 بجے تک لاوڈ اسپیکرکا استعمال ممنوع ہوگا۔

[adrotate group="32"]
x

Check Also

مودی حکومت کی افسران پر کارروائی جاری، مزید 15 افسران کو جبری ریٹائرمنٹ

مودی حکومت کی طرف سے حال ہی میں وزارت خزانہ سے جڑے ...