بنیادی صفحہ / تازہ خبریں / اہم امور پر خاموشی اختیار کر کے پی ایم مودی نے مایوس کیا: کانگریس

اہم امور پر خاموشی اختیار کر کے پی ایم مودی نے مایوس کیا: کانگریس

Print Friendly, PDF & Email

نئی دہلی: کانگریس نے کہا کہ وزیراعظم نریندر مودی نے آج صبح جب ملک سے خطاب کیا تو امید تھی کہ وہ منریگا کارڈ ہولڈروں، کسانوں، ڈاکٹروں اور طبی عملہ کے مفاد میں کوئی ٹھوس اعلان کریں گے لیکن ان امور پر خاموشی اختیارکرکے انہوں نے ملک کو مایوس کیا ہے۔ نیز وزیر اعظم مودی کے جمعہ کی صبح کو جاری کئے گئے ویڈیو پیغام میں بصیرت کا فقدان ہے۔

 کانگریس کے ترجمان پون کھیڑا نے جمعہ کو یہاں پریس کانفرنس میں کہا کہ گزشتہ دس دنوں میں ملک میں ضروری اشیا کی سپلائی متاثر ہوئی ہے اور لوگوں کو پوری طرح سے ضروری اشیا کی سپلائی نہیں ہو پا رہی ہے۔

 انہوں نے کہاکہ ملک میں جگہ جگہ ضروری اشیا کی آمدورفت میں رخنہ آیا ہے جس کی وجہ سے ریاستوں میں ضروری اشیا کی کمی ہورہی ہے۔ تمام ریاستوں کی سرحدیں سیل ہیں اور 60فیصد ٹرک سڑکوں پر نہیں ہیں۔ ملک میں تقریباََ سوا سوکروڑ کرانہ کی دکانیں ہیں لیکن سامان کی کمی کی وجہ سے مشکل سے لاکھ یا سوا لاکھ کرانہ دکانیں ہی کھل پارہی ہیں۔

 ترجمان نے کہاکہ سپلائی چین متاثر ہونے سے ملک میں مہنگائی بہت بڑھ گئی ہے۔ سبزی، دال، آٹا، چاول وغیرہ کی قیمتیں آسمان چھورہی ہیں۔ ٹرانسپورٹ لاگت کئی گنا بڑھ گئی ہے جس کی وجہ سے آٹا، دالیں، سبزیاں دو گنی قیمت پر فروخت ہورہی ہیں لیکن اس کا فائدہ کسان کو نہیں مل پارہا ہے۔

وزیر اعطم کی تقریر بصیرت سے محروم: ششی تھرور

 کانگریس کے سینئر رہنما اور رکن پارلیمان ششی تھرور نے وزیر اعظم مودی کے اس ویڈیو پیغام کی مذمت کی ہے جس میں انہوں نے اتوار کی شب 9 بجے بتی جلانے کی اپیل کی ہے۔ تھرور نے کہا کہ وزیر اعظم کی تقریر میں مستقبل کی کوئی بصارت نہیں ہے۔

 تھرور نے ٹوئٹ کیا، ’’پردھان شومین کو سنیئے، ان کے بوجھ، ان کی مالی فکر کو دور کرنے کے لئے ان کے پاس کچھ نہیں ہے۔ مستقبل کے برے میں کوئی بصیرت نہیں کہ لاک ڈاؤن ختم ہونے بعد وہ کیا فیصلہ لینے جا رہے ہیں۔ ہندوستان کے ’فوٹو-آپ‘ وزیر اعطم نے صرف ’فیل گُڈ‘ کا ماحول بنایا۔

x

Check Also

پچھلے چوبیس گھنٹوں میں ریاست میں  کورونا کے 135 نئے معاملات: کل تعداد 2418 کو پہنچی

بینگلور: 27 مئی،20 (بھٹکلیس نیوز بیورو)  ریاست کرناٹک میں پچھلے چوبیس گھنٹوں ...