بنیادی صفحہ / تازہ خبریں / نربھیا اجتماعی آبروریزی کیس : نظر ثانی کی عرضی خارج ، سپریم کورٹ نے سزائے موت برقرار رکھی

نربھیا اجتماعی آبروریزی کیس : نظر ثانی کی عرضی خارج ، سپریم کورٹ نے سزائے موت برقرار رکھی

Print Friendly, PDF & Email

دہلی کے نربھیا اجتماعی عصمت دری معاملہ میں چار مجرموں میں سے تین کی نظر ثانی کی عرضی خارج کرتے ہوئے سپریم کورٹ نے موت کی سزا کے فیصلہ کو برقرار رکھا ہے۔ چیف جسٹس آف انڈیا (سی جے آئی ) دیپک مشرا، جسٹس آر بھانومتی اور جسٹس اشوک بھوشن کی تین رکنی بینچ نے مکیش(29)، پون گپتا (22) اور ونے شرما کی عرضیوں پر اپنا فیصلہ سنایا ۔

خیال رہے کہ سپریم کورٹ نے اپنے 2017 کے فیصلہ میں دہلی ہائی کورٹ اور نچلی عدالت کےذریعہ 23 سالہ پیرامیڈیکل طالبہ سے 16 دسمبر 2012 کو اجتماعی آبروریزی اور قتل کے معاملہ میں انہیں سنائی گئی موت کی سزا کو برقرار رکھا تھا۔

قابل ذکر ہے کہ آبروریزی کیس کے قصورواروں میں سے ایک رام سنگھ نے تہاڑ جیل میں مبینہ طور پر خود کشی کر لی تھی، جبکہ ایک دیگرنابالغ مجرم کو عدالت نےاصلاح اطفال گھر بھیج دیا تھا۔ اس نے اصلاح اطفال گھر میں سزا کے اپنے تین سال پورے کر لئے ہیں۔

x

Check Also

شوہر کی موت پر رنجیدہ خاتون کی کنویں میں چھلانگ لگا کر خود کشی

گوکرن: 15 جولائی، 18 (بھٹکلیس نیوز بیورو) تعلقہ کے اگراگونا میں ہفتہ ...