بنیادی صفحہ / قومی / یو پی: بی جے پی رکن اسمبلی کے بیٹے پر لگا دلت ملازم کو پیٹنے کا الزام، گرفتاری کا مطالبہ

یو پی: بی جے پی رکن اسمبلی کے بیٹے پر لگا دلت ملازم کو پیٹنے کا الزام، گرفتاری کا مطالبہ

Print Friendly, PDF & Email

اتر پردیش کے بی جے پی رکن اسمبلی سریندر سنگھ کے بیٹے ہزاری سنگھ پر ایک دلت ملازم کو پیٹنے کا الزام لگا ہے۔ تحصیل دفتر کے سینکڑوں ملازمین نے بدھ کو ہوئے اس واقعہ پر ہزاری سنگھ کی گرفتاری کا مطالبہ کرتے ہوئے تھانہ پر احتجاجی مظاہرہ کیا۔ خبروں کے مطابق جمدھاریوا گاؤں میں ایک اسپیشل بوتھ لول افسر کی پسند پر ہوئے تنازعہ کے بعد ہزاری سنگھ نے ملازم رادھے شیام کی پٹائی کر دی تھی۔ جیسے ہی تنازعہ بڑھا، ہزاری سنگھ نے ملازم کی پٹائی کر دی۔

 رادھے شیام نے اس سلسلے میں کہا کہ ’’میں نے انہیں سمجھانے کی کوشش کی کہ معاملے کو طے مدت میں حل کر لیا جائے گا، لیکن انھوں نے اور ان کے ساتھ آئے ایک درجن لوگوں نے مجھے مارا۔ جب میں زمین پر گرا، انھوں نے مجھے لات اور گھونسوں سے مارا۔‘‘ حالانکہ ہزاری سنگھ نے ایسے کسی واقعہ سے پوری طرح انکار کیا اور کہا کہ متعلقہ ملازم نے ان کے ساتھ غلط سلوک کیا اور ان کے ایک حامی کو دھکا دیا۔

 ہزاری سنگھ کا کہنا ہے کہ ’’میں نے صرف مداخلت کی اور اس کے بعد اپنے حامیوں کے ساتھ واپس آ گیا، جب کہ ملازم اپنے راستے چلا گیا۔‘‘ رابطہ کرنے پر پولس نے معاملے میں کچھ بھی کہنے سے انکار کر دیا ہے۔ واضح رہے کہ بی جے پی رکن اسمبلی سریندر سنگھ اپنے متنازعہ بیانات کے لیے جانے جاتے ہیں۔ اس سے پہلے بھی وہ بی ایس پی سپریمو مایاوتی اور مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی جیسے لیڈروں کے خلاف ہتک آمیز الفاظ کا استعمال کر چکے ہیں۔

x

Check Also

کولکاتا میں کل سے تقسیم کیے جائیں گے عارضی راشن کوپن

کولکاتا: مغربی بنگال حکومت لاک ڈاؤن کے درمیان راشن فراہم کرنے کے ...