بنیادی صفحہ / قومی / مایاوتی کا دعویٰ – ‘وزیراعظم کے لئے میں ہوں سب سے بہتردعویدار’۔

مایاوتی کا دعویٰ – ‘وزیراعظم کے لئے میں ہوں سب سے بہتردعویدار’۔

Print Friendly, PDF & Email

لوک سبھا الیکشن 2019 کے نتیجے 23 مئی کوآنے والے ہیں، لیکن اس سے قبل ہی کئی لیڈروں نے وزیراعظم عہدہ کے لئے اپنی دعویداری پیش کردی ہے۔ اسی ضمن میں بی ایس پی سربراہ مایاوتی نے دعویٰ کیا ہےکہ وہ وزیراعظم عہدے کےلئے سب سے فٹ امیدوار ہیں۔ واضح رہےکہ انہوں نے جمعرات کو وزیراعظم مودی پرحملہ کرتے ہوئے انہیں ‘ان فٹ’ قرار دیا تھا۔ اس سے قبل وزیرخزانہ ارون جیٹلی نے کہا تھا کہ مایاوتی وزیراعظم بننےکےلائق نہیں ہیں۔

ایک بیان میں مایاوتی نےکہا ‘جہاں تک ترقی کی بات ہے، بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) نے اترپردیش کا چہرہ بدل دیا۔ لکھنوکوبھی خوبصورت بنایا گیا ہے۔ اس کی بنیاد پرکہی جا سکتی ہے کہ لوگوں کی فلاح اورملک کی ترقی کودیکھتےہوئے بی ایس پی کی قومی صدر وزیراعظم بننے کےلئے فٹ ہے جبکہ نریندرمودی ان فٹ ہیں’۔

 اپنی حصولیابیوں کی تعریف کرتے ہوئے مایاوتی نےکہا کہ 4 باروزیراعلیٰ رہتے ہوئے ان کی شبیہ کافی صاف ستھری رہی ہے۔ ساتھ ہی انہوں نےلا اینڈ آرڈرکو برقراررکھتے ہوئے لوگوں کےمفاد کےلئےکام کیا ہے۔ گزشتہ دنوں نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی) کے سربراہ شرد پوارنے وزیراعظم عہدہ کےلئے اپوزیشن کے تین ناموں کی حمایت کی تھی، جس میں انہوں نےمایاوتی کا بھی نام لیا تھا۔ اس کےعلاوہ گزشتہ دنوں اکھلیش یادو نے بھی مایاوتی کو وزیراعظم عہدہ کا دعویداربتایا تھا۔

جیٹلی نے بتایا تھا ان فٹ

وزیرخزانہ ارون جیٹلی نے بی ایس پی سربراہ مایاوتی کووزیراعظم عہدہ کے لئے’ان فٹ’ قراردیا ہے۔ اس سے پہلے مایاوتی نےایک پریس کانفرنس کرکے وزیراعظم مودی اوران کی بیوی پر’ذاتی’ تبصرہ کیا تھا۔ جیٹلی نےٹوئٹ کرکےکہا تھا ‘وہ (مایاوتی) وزیراعظم بننے کی مضبوط خواہش رکھتی ہیں۔ ان کا گورننس، ایتھکس اورنظریہ اب تک کے سب سے نچلی سطح پرپہنچ چکی ہے۔ آج انہوں نے وزیراعظم پرجو ذاتی حملہ کیا ہے، اس سے ثابت ہوتا ہے کہ وہ وزیراعظم بننے کی اہل نہیں ہیں’۔

x

Check Also

پلوامہ کے بعد پاکستان نے کی تھی ایک اوربڑی غلطی، حملہ کرنے والی تھی ہندوستانی بحریہ، پھرہوا ایسا

ہندوستانی فوج نے پلوامہ میں سی آرپی ایف کے قافلے پرہوئے دہشت ...