بنیادی صفحہ / قومی / جامعہ: لائبریری میں پڑھ رہے طلباء پر پولیس نے کی تھی بربریت، ویڈیو سے انکشاف

جامعہ: لائبریری میں پڑھ رہے طلباء پر پولیس نے کی تھی بربریت، ویڈیو سے انکشاف

Print Friendly, PDF & Email

جامعہ ملیہ اسلامیہ میں 15 دسمبر 2019 کو پولیس کی طرف سے کی گئی بربریت سے متعلق ایک ویڈیو منظر عام پر آئی ہے۔ جامعہ کوآرڈینیشن کمیٹی کی طرف سے جاری کی گئی اس ویڈیو میں نظر آ رہا ہے کہ پولیس لائبریری میں موجود ان طلباء کو زد و کوب کر رہی ہے جو وہاں مطالعہ کر رہے تھے۔ جامعہ کوآرڈینیشن کمیٹی (جے سی سی) نے دعوی کیا ہے کہ ویڈیو 15 دسمبر 2019 کی ہے۔

 جے سی سی کا کہنا ہے کہ سی اے اے مخالف احتجاج کے دوران پولیس لائبریری میں داخل ہوئی تھی اور اس نے مطالبہ کر رہے طلباء پر لاٹھی چارج کیا تھا۔ جاری کردہ ویڈیو میں طلباء لائبریری میں پڑھتے ہوئے نظر آرہے ہیں۔ ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ کیسے پولیس اچانک لائبریری میں داخل ہوتی ہے اور وہاں موجود طلبا کو پیٹنا شروع کر دی جاتی ہے۔

 جامعہ کوآرڈینیشن کمیٹی نے ویڈیو جاری کرتے ہوئے کہا کہ فوٹیج میں دیکھا جا سکتا ہے پولیس کس طرح طلباء پر بربریت کر رہی ہے، کمیٹی نے کہا کہ ویڈیو سے ظاہر ہے کہ پولیس حکومت کی پشت پناہی میں تشدد کر رہی ہے۔ واضح رہے کہ جامعہ کے طلباء لائبریری میں اپنے امتحان کی تیاری کر رہے تھے کہ اچانک پولیس نے پہنچ کر ان کے ساتھ بربریت کی۔

 دہلی پولیس نے بھی اس ویڈیو پر ردعمل ظاہر کیا ہے۔ پولیس نے بتایا ہے کہ ویڈیو میں کچھ نقاب پوش افراد بھی دکھائی دے رہے ہیں۔ پولیس کا کہنا ہے کہ پورے معاملے کی تفتیش کی جا رہی ہے۔

ویڈیو جاری کرنے والی جامعہ کوآرڈینیشن کمیٹی شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے) اور قومی شہریت رجسٹر (این آر سی) کے خلاف جاری تحریکوں کی قیادت کر رہی ہے۔ کمیٹی میں جامعہ کے متعدد سابق طلباء بھی شامل ہیں۔

 

x

Check Also

کورونا: پوری طرح بند نہیں ہے ہندوستانی ریل، خاموشی کے ساتھ کر رہا آپ کی خدمت!

21 دنوں کے ملک گیر لاک ڈاؤن کے درمیان انڈین ریلویز نے ...