بنیادی صفحہ / قومی / کسان آندولن پر وزیر اعظم مودی کا اپوزیشن پر نشانہ، کہا- زرعی قوانین پر چل رہا ہے خوف پھیلانے کا کھیل

کسان آندولن پر وزیر اعظم مودی کا اپوزیشن پر نشانہ، کہا- زرعی قوانین پر چل رہا ہے خوف پھیلانے کا کھیل

Print Friendly, PDF & Email

وارانسی: وزیر اعظم نریندر مودی (PM Narendra Modi) پیر کو اپنے پارلیمانی حلقہ وارانسی کے دورے پر پہنچ گئے ہیں۔ وزیر اعظم مودی ایئر پورٹ سے سیدھا وارانسی کے کھجوری پہنچے، جہاں انہوں نے سکس لین ہائی وے کا افتتاح کیا۔ اس دوران وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ ہم نے وعدہ کیا تھا کہ سوامی ناتھن کمیشن کی سفارش کے مناسب لاگت کا ڈیڑھ گنا ایم ایس پی (MSP) دیں گے۔ یہ وعدہ صرف کاغذوں پر ہی پورا نہیں کیا گیا، بلکہ کسانوں کے بینک کھاتے تک پہنچایا ہے۔ انہوں نے کہا، ’ہم نے کہا تھا کہ ہم یوریا کی کالا بازاری روکیں گے اور کسان کو مناسب یوریا دیں گے۔ گزشتہ 6 سال میں یوریا کی کمی نہیں ہونے دی۔ پہلے یوریا بلیک میں لینا ہوتا تھا، یوریا لینے آئے کسانوں پر لاٹھی چارج تک ہوتا تھا۔ کسانوں کے نام پر بڑی بڑی اسکیمیں اعلان کی جاتی تھیں، لیکن وہ خود مانتے تھے کہ ایک روپئے میں سے صرف 15 پیسے ہی کسانوں تک پہنچتے تھے۔

پہلے MSP کے نام پر کسانوں کے ساتھ ہوتا تھا دھوکہ: وزیر اعظم

وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ پہلے MSP تو اعلان کیا جاتا تھا، لیکن ایم ایس پی پر خرید بہت کم کی جاتی تھی۔ سالوں تک MSP کو لے کر دھوکہ کیا گیا۔ کسانوں کے نام پر بڑے بڑے قرض معافی کے پیکیج اعلان کئے جاتے تھے، لیکن چھوٹے اور متوسط کسانوں تک یہ پہنچتے ہی نہیں تھے۔ غلط تشہیر کی جاتی ہے کہ فیصلہ تو ٹھیک ہے، لیکن اس سے آگے چل کر ایسا ہوسکتا ہے، جو ابھی ہوا ہی نہیں، جو کبھی ہوگا ہی نہیں، اس کو لے کر سماج میں خوف پھیلایا جاتا ہے۔ یہ وہی لوگ ہیں، جنہوں نے دہائیوں تک کسانوں کے ساتھ دھوکہ کیا ہے۔ پہلے ہوتا یہ تھا کہ حکومت کا کوئی فیصلہ اگر کسی کو پسند نہیں آتا تھا تو اس کی مخالفت ہوتی تھی، لیکن گزشتہ کچھ وقت سے ہم دیکھ رہے ہیں کہ اب مخالفت کی بنیاد پر فیصلہ نہیں بلکہ خوف پھیلا کر خدشات پیدا کئے جارہے ہیں۔

وزیر اعظم مودی نے کہا کہ حکومتیں پالیسیاں بناتی ہیں، قوانین وضوابط بناتی ہیں۔ پالیسیوں اور قوانین کو حمایت بھی ملتی ہے تو کچھ سوال بھی فطری ہے۔ یہ جمہوریت کا حصہ ہے اور ہندوستان میں یہ زندہ روایت رہی ہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ ’پہلے منڈی کے باہر ہوئے لین دین غیر قانونی تھے۔ ایسے میں چھوٹے کسانوں کے ساتھ دھوکہ ہوتا تھا، تنازعہ ہوتا تھا۔ اب چھوٹا کسان بھی منڈی سے باہر ہوئے ہر سودے کو لے کر قانونی کارروائی کر سکتا ہے۔ کسان کو اب نئے متبادل بھی ملے ہیں اور دھوکے سے قانونی تحفظ بھی ملا ہے

x

Check Also

ممتا بنرجی نے عوام کے اعتماد کو توڑا ہے، سونار بنگلہ کا خواب ہم پورا کریں گے: مودی

کلکتہ: وزیرا عظم نریندر مودی نے آج بنگال میں اسمبلی انتخابات کے ...