بنیادی صفحہ / خلیجی / دبئی کی خاتون نے آن لائن بھیک مانگ کر 17 دنوں میں کمائے 35 لاکھ ، پھر سابق شوہر نے کیا ایسا کام ، پہنچ گئی جیل
علامتی تصویر

دبئی کی خاتون نے آن لائن بھیک مانگ کر 17 دنوں میں کمائے 35 لاکھ ، پھر سابق شوہر نے کیا ایسا کام ، پہنچ گئی جیل

Print Friendly, PDF & Email

فیس بک ، ٹویٹر اور انسٹاگرام جیسی سوشل میڈیا سائٹس کا استعمال بھیک مانگنے کیلئے بھی کیا جارہا ہے ۔ دبئی میں ایک خاتون نے آن لائن بھیک مانگ کر 17 دنوں میں 35 لاکھ روپے ( 50 ہزار ڈالر ) کما لئے ۔ لوگوں کو اپنے جھانسے میں پھنسانے کیلئے خاتون نے ٹویٹر ، انسٹاگرام اور فیس بک پر جذباتی پوسٹ اور فوٹیج شیئر کیں ۔ خاتون کی مبینہ دکھ بھری کہانی سے لوگوں کا بھی دل پسیج گیا ۔ 17 دنوں میں اس نے 35 لاکھ روپے اکٹھا کرلئے ، لیکن سابق شوہر نے اس کی پول کھول دی ۔ اب خاتون جیل کی سلاخوں کے پیچھے ہے ۔

یو اے ای کے اخبار خلیج ٹائمز کی ایک رپورٹ کے مطابق دبئی پولیس کے کرائم برانچ کے ڈائریکٹر عالم السلیم نے کہا کہ خاتون نے آن لائن اکاونٹ کھول کر اپنے بچوں کی تصویریں شیئر کیں ۔ خود کو گھریلو تشدد کا شکار بتایا اور بچوں کی پرورش کیلئے مالی مدد مانگی ۔

 پولیس افسر کے مطابق وہ لوگوں کو سوشل میڈیا پر بتا رہی تھی کہ وہ ایک طلاق شدہ ہے اور بچوں کیلئے پیسوں ضرورت ہے ۔ لیکن اس کے سابق شوہر نے پولیس کو ای کرائم پلیٹ فارم کے ذریعہ اطلاع دی ۔ انہوں نے ثابت کیا کہ بچے اس کے ساتھ رہ رہے تھے ۔

خیال رہے کہ ہندوستانی انتخابات میں جے این یو کے سابق طالب علم کنیہا کمار اور عام آدمی پارٹی کی لیڈر آتشی سمیت کئی امیدواروں نے آن لائن پلیٹ فارم پر فنڈنگ کی اپیل کی تھی ۔ دیگر ممالک میں بھی آن لائن فنڈنگ کا رواج بڑھ رہا ہے ، اس کو کراوڈ فنڈنگ کہا جاتا ہے ۔ اسی طریقے کو اپنا کر اس خاتون نے بھی آن لائن بھیک کی اپیل کی ۔ حالانکہ شوہر نے ای کرائم پلیٹ فارم کے ذریعہ اس کی پول کھول دی ، جس کے بعد اس کو گرفتار کرلیا گیا ۔

x

Check Also

حج کے دوران مکہ میں خانہ کعبہ کے سامنے لہرایا ترنگا، یوم آزادی کا منایا جشن

یوم آزادی یعنی 15 اگست کا جشن ملک بھر میں ہی نہیں ...