بنیادی صفحہ / خلیجی / سعودی عرب کے ہوٹلوں میں اب بغیر ثبوت دئیے رہ سکیں گے غیر ملکی مرد اور خواتین

سعودی عرب کے ہوٹلوں میں اب بغیر ثبوت دئیے رہ سکیں گے غیر ملکی مرد اور خواتین

Print Friendly, PDF & Email

سعودی عرب نے اپنے یہاں ہوٹلوں میں ٹھہرنے کے قوانین میں بڑی تبدیلی کی ہے۔ سعودی عرب نے قوانین میں نرمی دیتے ہوئے اب ہوٹل کے ایک ہی کمرے میں غیر ملکی خاتون اور مرد کو ٹھہرنے کی اجازت دے دی ہے۔ ایسا سعودی عرب میں سیاحت(ٹورزم) کو بڑھاوا دینے کیلئے کیا گیا ہے۔

اس کیلئے نیا ویزا لانچ کیا ہے تاکہ سعودی عرب میں بڑی تعداد میں سیاح آئیں۔ اس کے ساتھ ہی سعودی عرب سمیت دیگر ممالک کی خواتین کو بھی ہوٹل میں کمرہ لینے کی اجازت دے دی گئی ہے۔

سعودی عرب کی خواتین کو بھی راحت

سعودی عرب حکومت کی جانب سے دی گئی اس راحت سے اکیلی خواتین اور غیر ملکی خاتون و مرد کو ہوٹل کے ایک ہی کمرے میں ٹھہرنے میں آسانی ہوگی۔ سعودی عرب میں شادی کے بغیر جسمانی تعلقات بنانے پر پابندی ہے۔

 اس نئی پہل کےمطابق سعودی عرب کے شہریوں کو ہوٹل میں ٹھہرنے کیلئے اپنی فیملی آئی ڈی کارڈ رلیشن شپ کا پروف دینا ہوگا۔ جبکہ غیر ملکی خواتین اور مردوں کیلئے یہ نافذ نہیں ہوگا۔ اس کے تحت اب سعودی عرب کی خواتین ہوٹل میں آئی ڈی کارڈ دکھاکر اکیلے ٹھہر سکتی ہیں۔

x

Check Also

دبئی میں آرٹیفیشیل انٹلی جنس کے ذریعہ دنیا کی پہلی آن لائن فتوی سروس شروع ، جانیں کیسے کرے گا کام

اب آرٹیفیشیل انٹلی جنس کی مدد سے فتاوے بھی جاری کئے جائیں ...