سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز نے جدہ شہرکی 56 پرانی تاریخی عمارتوں کے تحفظ کے لیے ان کی مرمت کا حکم دیا ہے۔ ان عمارتوں مرمت کے منصوبے کےلیے 50 ملین ریال کی رقم مختص کی گئی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی ولی عہد کی طرف سے جدہ کی بوسیدہ ہونے والی تاریخی عمارتوں کی مرمت کا حکم دینے کا مقصد ان مقامات کو تحفظ فراہم کرنا اور قومی ثقافتی ورثے کے وجود کو ختم ہونے سے بچانا ہے۔

سعودی ولی عہد کی طرف سےجدہ کی پچاس سے زیادہ تاریخی عمارتوں کی مرمت اقوام متحدہ کے ادارہ برائے سائنس وثقافت کی ہدایات اور سعودی عرب کے اقتصادی ترقی کے ویژن 2030ء کا حصہ ہے جس کا مقصد سعودی عرب کے قومی ورثے بالخصوص جدہ کے تاریخی اور تہذیبی آثار کو زوال پذیر ہونےسے بچانا اور شہرکی تاریخی حیثیت کو برقرار رکھنا ہے۔

سعودی ولی عہدشہزادہ محمد بن سلمان مملکت کی تاریخی عمارتوں کے تحفظ میں گہری دلچسپی رکھتےہیں۔ ان کی گڈ گورننس کی ایک زندہ مثال ان کا مملکت کی تاریخ اور تہذیب کو زندہ رکھنےکے لیے مختلف منصوبوں‌پر کام جاری رکھنا ہے۔

شہزادہ محمد بن سلمان کی ہدایت پر جدہ شہری کی تاریخی یادگاروں کی مرمت کام کام سعودی وزارت ثقافت کےزیراہتمام کیا جائےگا۔ قبل ازیں وزارت ثقافت کی طرف سے ولی عہد سے کہا گیا تھا کہ وہ تاریخی عمارتوں کے تحفظ اور ان کی مرمت کے لیے نئے منصوبوں‌کی منظوری دیں۔ ولی عہد کی طرف سے ہدایات کے بعد تعمیراتی ماہرین کی زیرنگرانی جدہ شہر اور اس کی پرانی کالونیوں میں موجود سیکڑوں سال پرانی عمارتوں کی مرمت کی جائے گی۔ ان میں سے بعض مکانات اور عمارتیں 500 سال پرانی بتائی جاتی ہیں۔

سعودی عرب کےوزیر ثقافت شہزادہ بدر بن عبداللہ بن فرحان نے جدہ کی 56 تاریخی عمارتوں کی مرمت اور ان کی بحالی کے لیے بجٹ کی منظوری کے اعلان کا خیرمقدم کیا اور کہا کہ ان کی حکومت ملک میں موجود قومی ورثے کے تحفظ کے لیے ہرممکن اقدامات کرے گی۔