بنیادی صفحہ / کیریر اور تعلیمی خبریں / لازمی حاضری معاملہ میں جے این یو طلباء کو ملا ٹیچر یونین کا ساتھ

لازمی حاضری معاملہ میں جے این یو طلباء کو ملا ٹیچر یونین کا ساتھ

Print Friendly, PDF & Email

نئی دہلی۔ جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جےاین يو) ٹیچر یونین نے کلاس روم میں اسٹوڈنٹس کی لازمی حاضری کے معاملہ پر جاری ٹکراؤ کو بات چیت کے ذریعے فوری طور پر دور کرنے کی انتظامیہ سے اپیل کی ہے۔ٹیچر یونین نے کل اپنی مجلس عاملہ کی میٹنگ میں یہ فیصلہ کیا۔ ٹیچر یونین کی صدر سونجھريا منج اور سکریٹری سدھیر کے سُتار کی طرف سے آج یہاں جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ کل ایگزیکٹیو میٹنگ میں اسٹوڈنٹس کی کلاس میں موجودگی کو لازمی بنائے جانے کے فیصلے پر اعتراض کیا گیا اور اس معاملہ پر اساتذہ نے طلبا کا ساتھ دینے کا فیصلہ کیا۔

ٹیچر یونین نے انتظامیہ سے اپیل کی کہ وہ طلباء اور اساتذہ سے بات چیت کرکے اس مسئلہ کا حل نکالے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ پہلے بھی یونیورسٹی کے مراکزاور محکموں نے انتظامیہ سے اپنے بہت سے مسائل سے آگاہ کیا تھا اور شکایات درج کرائی تھی لیکن انتظامیہ نے انہیں حل کرنے کے بجائے من مانے فیصلے لینے شروع کر دئیے اور اپنے فیصلوں کو زبردستی لاگو کروانے لگا۔

 بیان میں کہا گیا کہ ٹیچر یونین کی صدر اور سکریٹری نے پہلے بھی دو بار وائس چانسلر کو ملاقات کے لئے خط لکھا تھا اور اب وہ ایک بار پھر خط لکھیں گے کہ وائس چانسلر انہیں وقت دیں۔ بیان کے مطابق اگر انتظامیہ نے مسئلہ کا حل نہیں کیا تو 16 فروری کو ٹیچر یونین کی جنرل میٹنگ میں مستقبل کی لڑئی کی حکمت عملی طے کی جائے گی۔

قابل غور ہے کہ حاضری کو لازمی بنائے جانے کے معاملے پر اسٹوڈنٹس اور انتظامیہ کے درمیان زبردست ٹکراؤ جاری ہے اور اسٹوڈنٹس احتجاج و مظاہرہ کررہے ہیں۔

x

Check Also

نیٹ 2018 نتائج: سی بی ایس ای نے جاری کئے نیٹ کے نتائج، یہاں کریں چیک

نئی دہلی۔ ملک بھر کے میڈیکل کالجوں میں داخلے کے لئے مرکزی ...