بنیادی صفحہ / کیریر اور تعلیمی خبریں / یو پی ایس سی امتحانات میں 50/سے زائد مسلم امیدواروں کی کامیابی

یو پی ایس سی امتحانات میں 50/سے زائد مسلم امیدواروں کی کامیابی

Print Friendly, PDF & Email

نئی دہلی،28اپریل(ایجنسی)یونین پبلک سرویس کمیشن (یو پی ایس سی) کے سیول سروسز امتحان 2017 کے نتائج کا اعلان 27 اپریل کو کیا گیا جس میں حیدر آباد کے انودیپ دوریشیٹی نے پہلا مقام حاصل کیا ہے۔ دوسرا مقام انو کماری اور تیسرا مقام سچن گپتا کو حاصل ہوا ہے۔ اس امتحان میں کامیاب ہونے والے کل 990 امیدواروں میں 50 سے زائد مسلم امیدوار بھی شامل ہیں۔ جہاں تک مسلم امیدواروں کی رینکنگ کا سوال ہے، سعد میاں خان کو 25واں مقام حاصل ہوا ہے۔ ٹاپ 100 کی فہرست میں کل 5 مسلم امیدواروں کے نام شامل ہیں۔ سعد میاں خان کے بعد فضل الحسیب (36واں مقام)، جمیل فاطمہ زیبا (62واں مقام)، حسین زہرہ رضوی (82واں مقام) اور آذر ضیا (97واں مقام) ٹاپ 100 میں شامل مسلم امیدواروں ہیں۔یو پی ایس سی امتحان کی تیاری کرانے والے زکوٰۃ فاؤنڈیشن آف انڈیا سے اس بار 26 امیدواروں نے کامیابی حاصل کی ہے۔ اس سلسلے میں زکوٰۃفاؤنڈیشن آف انڈیا کے صدر ڈاکٹر ظفر محمود نے سبھی 26 امیدواروں کی فہرست کچھ وہاٹس ایپ گروپس پر شیئر کی ہے۔ اس دوران جامعہ ملیہ اسلامیہ رسیڈنشیل کوچنگ سے بھی 25 امیدواروں کے یو پی ایس سی امتحان میں کامیابی کی خبریں موصول ہو رہی ہیں۔ جامعہ اسٹوڈنٹس فورم نے ان 25 امیدواروں کا نام جاری کرتے ہوئے ان سبھی کو مبارکباد بھی پیش کی ہے۔قابل ذکر ہے کہ یو پی ایس سی کا یہ امتحان 18 جون 2017 کو ہوا تھا جب کہ فائنل امتحان 28 اکتوبر 2017 سے 3 نومبر 2017 کے درمیان ہوا تھا۔ فروری 2018 میں امیدواروں کی شخصیت کا جائزہ لیا گیا تھا۔ اس امتحان کے ذریعہ ہندوستانی پولس سروس، ہندوستانی خارجہ سروس اور دیگر مرکزی خدمات (گروپ اے اور گروپ بی) کے لیے افسروں کا انتخاب کیا جاتا ہے۔ ہر سال منعقد ہونے والے یو پی ایس سی سول سرویسز امتحان میں 11 لاکھ سے زیادہ امیدوار امتحان میں بیٹھتے ہیں۔ اس مرتبہ امتحان میں شامل ہوئے سبھی امیدوار یو پی ایس سی کی ویب سائٹ پر جا کر اپنا نتیجہ دیکھ سکتے ہیں۔ گزشتہ سال سول سروسز 2016 کے امتحان میں کرناٹک کی نندنی کے آر نے اول مقام حاصل کیا تھا۔

x

Check Also

آدھار نہ ہونے پر اسکول میں داخلہ دینے سے منع نہیں کر سکتے: یو آئی ڈی اے آئی

نئی دہلی،6ستمبر(ایجنسی): یو آئی ڈی اے آئی نے کہا کہ اسکول آدھار ...