بنیادی صفحہ / بھٹکل و اطراف / بھٹکل میں ہوئی ہلکی بارش کے بعد کے ایچ بی کالونی میں  یو جی ڈی  کاموں کی کھلی پول

بھٹکل میں ہوئی ہلکی بارش کے بعد کے ایچ بی کالونی میں  یو جی ڈی  کاموں کی کھلی پول

Print Friendly, PDF & Email

بھٹکل : 16 نومبر، 2021 (بھٹکلیس نیوز بیورو)  بھٹکل میں گذشتہ رات ہوئی بارش کے بعد  پھر ایک بار یہاں پنچایت حدود میں آنے والے علاقے کرناٹکا ہاؤژنگ بورڈ (کے ایچ بی) کالونی میں یو جی ڈی کے لیے کھودی گئی سڑک زمین میں دھنس گئی  جس کی وجہ سے یہاں گاڑیاں پھنسنے لگی اور عوام کی جان پر بن آیا ۔ اس کے ساتھ ہی ایک اور جگہ چیمبرس کے قریب ہی گڈھا پڑ ا دیکھ کر عوام کا ماتھا ٹھنک گیا اور مقامی  عوام سڑک  پر جمع ہونا شروع ہوگئے۔

اس موقع پر عوام کا کہنا تھا کہ یو جی ڈی کا کام بالکل ہی ناقص طریقے پر کیا گیا ہے لیکن اس کا م کو  کرنے والے اس کی ذمہ داری لینےکے لیے تیار نہیں ہیں  اس پر مزید یہ کہ  سائٹ انجنئر اس کو بارش کا دوش قرار دے رہے ہیں ۔

عوام نے اس طرح کے   ناقص کام پر سوالات کھڑے کرتے ہوئے کہا کہ یہاں 20 لاکھ کی  لاگت سے کانکریٹ روڈ تعمیر کیا گیا تھا لیکن اس کو درمیان سے ہی کھود کر یو جی ڈی کی پائپ لائن بچھائی گئی اور بارش کے ہوتے ہی اس کام کی پول بھی کھل گئی ۔عوام کا یہ بھی کہنا تھا کہ پائپ کو جس طرح سے جوڑا جانا چاہئے تھا اس طرح سے نہیں جوڑا گیا ہے جس کی وجہ سے آگے چل کر ڈرینیج کا پانی کنوؤں میں جانے کا خدشہ ہے۔

عوام نے سوال کیا کہ اگر گڈھوں میں گر کر کسی کی جان تلف ہوجائے تو پھر  اس کا ذمہ دار کون ہوگا؟ کیا واٹر بورڈ اس کی تلافی کرے گا یا پھر عوام کو ان کے ناقص کاموں کا خمیازہ اپنی جان گنواکر دینا پڑے گا؟

خیال رہے کہ  بھٹکل  میں قریب 112 کروڑ کی لاگت سے کیے جارہے یو جی ڈی کام  پر  ہمیشہ سے ہی سوالات کھڑے ہوتے رہے ہیں اور ان کے ناقص کام پرہمیشہ سے سوالیہ نشان لگا رہا ہے۔  ایسے میں دیکھنا یہ ہوگا کہ عوامی نمائندے اس مسئلہ کو حل کرنے کے لیے مزید  کیا قدم اٹھاتے ہیں اور اسے کس طرح سے حل کرتے  ہوئے عوام کے لیے فائدہ مند بناتے ہیں۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*