بنیادی صفحہ / بھٹکل و اطراف / جامعہ اسلامیہ بھٹکل میں تعلیمی ایوارڈ تقریب کا انعقاد

جامعہ اسلامیہ بھٹکل میں تعلیمی ایوارڈ تقریب کا انعقاد

Print Friendly, PDF & Email

حضرت مولانا بلال صاحب حسنی ندوی مدظلہ العالی کا پرمغز خطاب

بھٹکل: 18 جولائی،2019 (بھٹکلیس نیوز بیورو) سال گزشتہ امتیازی نمبرات سے کامیابی حاصل کرنے والے طلبہ کے اعزاز میں آج 18/ جولائی 2019ء بروز جمعرات صبح دس بجے جامعہ اسلامیہ جامعہ آباد میں ایک تقریب منعقد ہوئی جس میں تشجیعی انعامات و سرٹیفکیٹ کی تقسیم کے ساتھ حضرت مولانا بلال صاحب حسنی ندی مدظلہ العالی کا خطاب بھی ہوا۔
مہتمم جامعہ مولانا مقبول احمد صاحب کوبٹے ندوی نے جلسہ کی غرض و غایت پیش کرتے ہوئے فرمایا کہ اس طرح کے جلسوں کا مقصد طلبہ کے اندر علمی و فکری ہر میدان میں آگے بڑھنے کا شوق و جذبہ پیدا کرنا ہے، اس میں محنتی طلبہ کی ہمت افزائی اور دیگر طلبہ کی ترغیب ہوتی ہے۔ مولانا نے ممتاز طلبہ کو مبارکباد دیتے ہوئےفرمایا کہ طالبان علوم نبوت اللہ کے رسول  کے نمائندے ہیں، اس لیے اللہ کے رسول کی ان صفات اور اخلاق و کردار کو اپنی ذات سے اپنانا ہے اور اس کی دعوت امت کو دے کر اللہ کے سچے پیغام کو پوری انسانیت تک پہنچانا ہے ۔نیزطلبہ اگر اپنے کام اپنے شوق سے کرنے لگیں تو ان کے لیے آگے ترقی کے مراحل کھلتے جائیں گے ۔نیز مدرسہ کی طرف سے جو ہدایات دی جاتی ہیں اس پر عمل کرنے اور اپنے بچوں کی فکر کرنے کی سرپرستوں سے گزارش کی۔
مہمان خصوصی حضرت مولانا بلال صاحب حسنی ندوی مدظلہ العالی نے اپنے پرمغز خطاب میں دین کو اپنا مقصد حیات بنانے کی تلقین کرتے ہوئے طلبہ سے فرمایا کہ آپ نبوی علم کے لیے اللہ کی طرف سے چنے گئے ہیں، اس لئے اس علم کی قدر کریں اور اس کو دوسروں تک پہنچانے کی فکریں اپنے اندر پیدا کریں۔ مولانا نے مزید فرمایا کہ ہر مسلمان نمائندۂ رسول ہے لیکن سب سے بڑھ کر نمائندہ وہ ہے جو علم نبوت کو حاصل کررہاہے اور آگے چل کر وہ عالم ہوگا اور اس کی تشریح و اشاعت کرے گا۔ اللہ کے رسول  کی وراثت صرف الفاظ کی نہیں بلکہ یہ ان معانی و حقائق اور درد کی وراثت ہے جس کا ذکرآیت شریفہ ’’ لعلک باخعٌ نفسک علی آثارھم ان لم یؤمنوا بھذا الحدیث اسفا‘‘ میں ہوا۔
مولانا نے حالات حاضرہ پر روشنی ڈالتے ہوئے طلبہ کو نصیحت فرمائی کہ اپنے دل کو خدا کا گھر بنائیں، اپنے شعور کو بیدار کریں اور اپنے اوقات کا جامعہ کے احاطہ میں رہ کر صحیح استعمال کریں تاکہ آپ کا مستقبل روشن ہو۔
اس کے بعد مشرف اللجنۃ العربیۃ مولانا عبدالرب صاحب ندوی اور مولانا رحمت اللہ صاحب ندوی نے ممتاز طلبہ اور سو فیصد حاضر طلبہ کے ناموں کا اعلان کیا جنھیں تشجیعی انعامات اور سرٹیفکیٹ سے نوازا گیا۔
واضح رہے کہ اس تقریب میں دو خصوصی اعزازات دئے جاتے ہیں
۱۔ منیری ایوارڈ : یہ ایوارڈ الحاج محی الدین منیری صاحب رحمہ اللہ کی طرف منسوب ہے، الحمدللہ کئی سالوں سے یہ ایوارڈ ان طلبہ کے نام دیا جارہا ہے جنھوں نے پورے جامعہ میں امتیازی فیصد کے ساتھ اول، دوم، سوم مقام حاصل کیا ہو، یہ جامعہ کے ہر شعبہ کے اعتبار سے دیا جاتا ہے۔
۲۔ مولانا عبدالباری ندوی ایوارڈ: یہ ایوارڈ سابق مہتمم جامعہ حضرت مولانا عبدالباری ندوی علیہ ا لرحمہ کی طرف منسوب ہے، اس کا مستحق وہ طالب علم ہوتا ہے جس نے عالمیت کے آخری سال 80 فیصد یا 80 سے زائد فیصد لے کر اول مقام حاصل کیا ہے، یہ ایوارڈ الحمدللہ ابنائے جامعہ منطقۂ شرقیہ کی طرف سے جامعہ اسلامیہ کے اشتراک کے ساتھ دیا جاتا ہے، امسال اس ایوارڈ کے حقدار مولوی شہباز ابن عبدالرؤوف کڑپاڑی رہے جنھوں نے %88.77 فیصد کے ساتھ اول مقام حاصل کیا۔
یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ دارالعلوم ندوۃ العلماء لکھنو سے فضیلت کی تکمیل کے بعد طلبہ جامعہ اسلامیہ کے شعبۂ حفظ میں داخلہ لے کر کم سے کم مدت میں حفظ قرآن کی تکمیل کرتے ہیں ، سال گزشتہ مولوی حافظ جعفر صوان بن محمد صادق رکن الدین ندوی نے 49 دنوں میں قرآن مجید کو مکمل حفظ کرکے ایک تاریخ رقم کردی اور اعزاز کے حقدار رہے۔
اس تقریب میں عزیزم بلال ابن مناف ساوڑانے اپنی عالمیت کی تعلیم کے ساتھ مولانا مذکر صاحب ندوی کے پاس قرآن مجید کو حفظ کرنے کی سعادت حاصل کی، انہیں بھی انعام سے نوازا گیا۔
اس موقع پر مولانا ایوب صاحب ندوی اور مولانا طلحہ صاحب ندوی نے اپنے تاثرات میں طلبہ کو محنت اور لگن کے ساتھ علم دین سیکھنے اور اپنے کاموں کو پلاننگ کے ساتھے انجام دینے کی نصیحت فرمائی۔
ملحوظ رہے کہ اس کا آغاز عزیزم دانش شنگیٹھی کی تلاوت سے ہوااور سید نبیغ برماور نے نعتیہ کلام پیش کیا،جبکہمولانا اقبال صاحب نائیطے ندوی نے مہمانوں کا پرتپاک خیر مقدم کیا۔ اس جلسہ کی نظامت مولانا عبدالعلیم صاحب خطیب ندوی نے بحسن وخوبی انجام دی۔
اس دوران ترانۂ جامعہ سید نبیغ برماور ان کے رفقاء نے پیش کیا اور عبداللہ عتبان نے منظوم عربی دعا مترنم آواز میں پڑھی۔
اخیر میں مہتمم جامعہ نے آئے ہوئے مہمانوں کا شکریہ ادا کیا اور صدر جامعہ مولانا محمد اقبال صاحب ملا ندوی کی دعا پر ظہر سے قبل تقریب کا اختتام ہوا۔

 

x

Check Also

مدینہ ویلفئیر سوسائٹی نے تینگن گنڈی سڑک پر جمع ہورہے پانی کا مسئلہ حل کرنے ذمہ داران کو سونپا میمورنڈم

بھٹکل: 18 ستمبر، 19 (بھٹکلیس نیوز بیورو) تنگن گنڈی کراس جامعہ آباد ...