بنیادی صفحہ / بھٹکل و اطراف / ملک بھر میں چلے ڈاکٹروں کے احتجاج کا بھٹکل میں بھی اثر ؛  اسپتال  بندرہنے سےمریض ہوئے پریشان

ملک بھر میں چلے ڈاکٹروں کے احتجاج کا بھٹکل میں بھی اثر ؛  اسپتال  بندرہنے سےمریض ہوئے پریشان

Print Friendly, PDF & Email

بھٹکل: 17 جون، 19 (بھٹکلیس نیوز بیورو) کولکاتہ کے نیل رتن سرکاری میڈیکل کالج میں ڈاکٹر پر ہوئے حملہ کے خلاف آج انڈین میڈیکل ایسوسی ایشن کی طرف  سے ملکی سطح پراعلان کیے گئے بند کا اثربھٹکل میں بھی دیکھا گیا جس سے مریضوں کو کافی مشکلات پیش آئیں۔ بند کے تعلق سےکافی لوگوں کو معلومات نہ ہونے کے سبب رکشہ پر ایک اسپتال سے دوسرے اسپتال کا چکر لگاتے ہوئے دیکھا گیا۔

آج کے اس احتجاج کے پیش نظر بھٹکل کے نجی اسپتالوں کے باہر صبح 6/بجے سے شام 6/بجے تک ایمرجینسی کے علاوہ کسی بھی مریض کو نہ لینے کا بورڈ آویزاں کیا گیا تھا۔

بند کی مناسبست سے بھٹکل کے ڈاکٹروں کی ایسوسی ایشن نے اسسٹنٹ کمشنر کے توسط سے وزیر اعظم کو میمورنڈم پیش کیا جس میں ڈاکٹر پر ہوئے حملہ کی سخت مذمت کی گئی اور ایسے عناصر کے خلاف سخت کارروائی کی مانگ کرتے ہوئے آئندہ کے لیے ڈاکٹروں کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے اقدامات کرنے کی مانگ کی گئی۔

اس موقع پر ایسوسی ایشن کے صدر ڈاکٹر گنیش پربھو، ڈاکٹر آر وی صرف، ڈاکٹر پانڈو رنگا نائک، ڈاکٹر وشواناتھ نائک، ڈاکٹر روی راج، ڈاکٹر گائیتری، ڈاکٹر یاسین محتشم، ڈاکٹر سمیع اللہ اور دیگر لوغ موجود تھے۔

تاہم ان سب کے پیچھے عوام سراپا سوال بن کر پوچھ رہے ہیں کہ کیا ایک جگہ کی حرکت کے لیے پورے ملک کے ڈاکٹروں کا اپنی خدمات معطل کرنا کہاں کی انسانیت ہے؟۔ ہمارے ملک میں اس سے پہلے بھی آئی ایم اے کے جانب سے سرویس کو معطل کیا گیا ہے حلانکہ جمہوری ملک میں اپنے جائز حق کے لیے آواز اٹھانا بالکل صحیح ہے لیکن ڈاکٹر ی جیسے معزز پیشہ اختیار کرنے والوں  کو باربار اس طرح سے سڑکوں پر اترنا کہاں تک زیبا دیتا ہے یہ خود ڈاکٹروں کو ہی سوچنا چاہئے۔

x

Check Also

ٹرافک اصولوں کے تعلق سے بیداری پیدا کرنے بھٹکل کے مختلف مقامات پر پولس محکمہ کی بیداری مہم

بھٹکل: 12 ستمبر، 19 (بھٹکلیس نیوز بیورو) بھٹکل پولس محکمہ کی جانب ...